لیاری گینگ وار کا سرغنہ غفار ذکری ہلاک

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/10/Ghaffar-Zikri-Muqabala-Khi-PKG-04-10.mp4"][/video]

لياري کے علاقے علی محمد محلہ ميں پوليس مقابلے ميں لياری گينگ وارکا مرکزی ملزم غفار ذکری ساتھی سميت مارا گيا ہے۔ پوليس اور گينگ وار کےدرميان ہونے والی فائرنگ کی زد ميں آکرغفار ذکری کا بیٹا چھوٹا ذکری بھی مارا گیا۔ مقابلے میں2 پولیس اہلکاراور2راہگير بھي زخمی ہوئے۔

کراچی پولیس کو دہشت گردوں کے خلاف کارروائی میں بڑی کامیابی مل گئی۔ پولیس چیف امیر شیخ کے مطابق لیاری کے علاقے علی محمد محلہ میں حساس اداروں کی نشاندہی پر پولیس اور قانون نافذ کرنے والے اداروں نے سرچ آپریشن کیا، اس دوران ملزمان نے پولیس اہلکاروں پر فائرنگ کردی اور دستی بم سے حملے بھی کیے۔

پولیس چیف  نےبتایا کہ لياري علي محمد محلے ميں پوليس مقابلے کے دوران گينگ وار سرغنہ غفار ذکری ساتھي سميت مارا گيا۔ فائرنگ کي زد ميں آکر تين سالہ بچہ بھي جاں بحق ہوا جبکہ دو پوليس اہلکاروں سميت چار افراد زخمي ہوگئے۔ملزمان سے2کلاشنکوف،18اوان بم اور5دستی بم بھی برآمدہوئے ہیں۔غفارذکري کے سرکي قيمت 25لاکھ روپے مقررتھی۔ غفارذکري قتل کي 100سے زائد وارداتوں ميں ملوث تھا۔

لیاری میں دہشت کی علامت غفار ذکری کون تھا؟

پولیس چیف کاکہناتھاکہ پولیس ٹیم کیلئےاپنی طرف سے5لاکھ روپے کےانعام کا اعلان کرتاہوں۔ انھوں نے مزید کہاکہ اپنےشہداءکوسلام پیش کرتاہوں۔ماضی میں پولیس اہلکاروں کوچن چن کرنشانہ بنایاگیا۔

 

lyari gang war

ghaffar zikri

Tabool ads will show in this div