منی لانڈرنگ کیس، ڈالر گرل ایان علی کیخلاف چالان پیش، مرکزی ملزم قرار

اسٹاف رپورٹ

راولپنڈی : منی لانڈرنگ کیس میں کسی اہم شخصیت کے ملوث ہونے کی قیاس آرائیاں دم توڑ گئیں، گرفتار ماڈل ایان علی مرکزی ملزمہ قرار دے دی گئیں، کیس میں دیگر 2 افراد بھی نامزد کردیئے گئے۔

جوڈیشل ریمانڈ مکمل ہونے پر سُپر ماڈل ایان علی کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج کی عدالت لایا گیا، پیشی کے موقع پر ایان علی نے گلابی رنگ کی ساڑھی زیب تن کر رکھی تھی، کسٹم جج تعینات نہ ہونے پر ایان علی کو ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج بہادر علی کی عدالت میں پیش کیا گیا۔

عدالت میں منی لانڈرنگ کیس کا چالان بھی پیش کردیا گیا، جس سے کیس میں اعلیٰ شخصیت کے ملوث ہونے کی قیاس آرائیاں دم توڑ گئیں، چالان میں ایان کو مرکزی ملزمہ قرار دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ ملزمہ 5 لاکھ سے زائد ڈالر دبئی اسمگل کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کی گئیں، ملزمہ اتنی بھاری رقم کی ملکیت کا کوئی ٹھوس ثبوت پیش نہیں کرسکیں، پراپرٹی ڈیلر ممتاز اور کراچی کے بزنس مین اویس بھی کرنسی اسمگلنگ میں ملوث ہیں۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج نے ایان علی سے جیل میں ملنے والی سہولیات کے بارے استفسار کیا تو ڈالر گرل پھٹ پڑیں، ان کا کہنا تھا کہ وہ موسمی الرجی کا شکار ہیں لیکن جیل میں علاج کی سہولت تک موجود نہیں، عدالت نے جیل انتظامیہ کو حکم دیا کہ ایان علی کو علاج کی بہتر سہولت اور ادویات فراہم کی جائیں، مقدمہ کی آئندہ سماعت 27 اپریل کو ہوگی۔ سماء

nepra

Tabool ads will show in this div