ادویات کی قیمتوں پر ناجائز منافع،ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی بےبس

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/09/Senate-Committee-Health-Isb-Pkg-28-09.mp4"][/video]

دوائیں بنانے والی کمپنیاں دکھ درد کے مارے عوام کو مہنگائی کے ٹیکے لگانے لگیں۔ اٹھارہ روپے کی گولی پانچ سو روپے، ستائیس روپے قیمت والا انجکشن سات سو روپے میں فروخت کئے جانے کا انکشاف ہواہے۔ ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کاکہناہےکہ  ناجائز منافع خوروں کا علاج ہمارے بس کی بات نہیں۔

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے صحت میں ناجائز منافع خوروں کامعاملہ اٹھا دیا گیا۔ اجلاس میں انکشاف ہواکہ اٹھارہ روپے والی گولی اور ستائیس روپے والے ٹیکے پر پانچ سے سات سو روپے بٹورے جا رہے ہیں ۔

 ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی نے کہا ہےکہ قیمتیں کم کرانا ہمارے بس کی بات نہیں۔ چیئرمین قائمہ کیمیٹی نے معاملہ وزیر اعظم اور چیف جسٹس کے نوٹس میں لانے کا اعلان کردیا۔

سینیٹر میاں عتیق الرحمٰن نے دکھی عوام کو انصاف دلانے کیلئے آخری حد تک جانے کی ٹھان لی اور کہاکہ دواؤں کی قیمتوں کو کم کرانے کیلئے اپنی پوری ذمہ داری نبھائیں گے۔

medicine prices

Tabool ads will show in this div