میدان کرکٹ پر راج کرنے والے سچن ٹنڈولکر نم آنکھوں کیساتھ رخصت

ویب ڈیسک:
ممبئی : بھارتی کرکٹ لیجنڈ سچن ٹنڈولکر چوبیس سال تک کرکٹ کے میدان میں راج کرنے کے بعد رخصت ہوگئے۔ دو دہائی سے زائد عرصے پر محیط  کریئر ان کے لازوال کارناموں سے بھرا پڑا ہے۔

کرکٹ کا سنہرا دور اپنے اختتام کو پہنچ گيا، بھارت کے  لیجنڈری بلے باز سچن ٹنڈولکر الوداعی ٹیسٹ تمام ہونے پر آبدیدہ ہوگئے۔ ہزاروں شائقین نے زبردست خراج تحسين پيش کيا۔ لٹل ماسٹر کہتے ہيں انہيں کرکٹ کيرئر ختم ہونے کا يقين نہيں آرہا، ماسٹر بلاسٹر بلے باز ريٹائرمنٹ کے دن والد کی کمی کو شدت سے محسوس کرتے رہے۔

ممبئی کے وینکھڈے اسٹیڈیم میں ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسرا ٹیسٹ بھارت کے لئے یادگار بن گیا۔ پہلی اننگز میں سچن نے چوہتر رنز بنائے اور آؤٹ ہوگئے، یہ اننگز ان کی آخری اننگ ثابت ہوئی۔ بھارتی ٹیم نے بڑا اسکور کرکے ویسٹ انڈیز کو اننگز کی شکست سے دوچار کیا، جس کے باعث ٹنڈولکر دوسری اننگ نہ کھیل سکے۔ آج جب میچ شروع ہوا تو سچن میدان میں داخل ہوئے تو شائقین کے شور سے کان پڑی آواز سنائی نہیں دے رہی تھی۔

میچ ختم ہوا تو عظیم بھارتی بیٹسمین سچن ٹنڈولکر نے وکٹ ہاتھ میں اٹھا کر فضا میں لہرائی اور وہ ساتھی کھلاڑیوں کی تالیوں کی گونج میں سر جھکائے میدان سے رخصت ہوئے۔ اس موقع پر ان کی آنکھیں چھلک پڑیں اور وہ آبدیدہ ہوگئے۔ سچن نے اس موقع پر بات کرتے ہوئے کہا کہ وہ کیریئر کے دوران ملنے والے پیار کو کبھی بھلا نہیں سکیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت کے ساتھ کھیلنا خواب سے کم نہیں تھا، ممبئی کرکٹ کا شکریہ جس نے مجھے سپورٹ کیا، انہوں نے کہا کہ  والدہ کی دعاؤں نے کیریئر میں اس قدر کامیابی دلائی،آج اپنے والد کی کمی بے حد محسوس کر رہا ہوں۔ سماء

کرنے

پر

christians

universities

glasses

Tabool ads will show in this div