کراچی میں غیرقانونی بس ٹرمینل شہریوں کےلیےوبال بن گئے

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/09/Bus-Terminal-issue-khi-PKG-16-09.mp4"][/video]

کراچی میں غیرقانونی بس ٹرمنل کا خاتمہ نہ کیا جاسکا۔ شہری آبادی میں قائم بس اڈوں کے باعث ٹریفک جام اور حادثات معمول بن گے۔

کراچی کے مسائل کم ہونے کا نام نہیں لے رہے۔ ایک طرف شہر میں بےہنگم ٹریفک تو دوسری جانب شہر میں غیر قانونی بس ٹرمنلزقائم ہیں۔

پولیس کی مبینہ سرپرستی میں صدر، لی مارکیٹ، نمائش چورنگي، سہراب گوٹھ سمیت شہر کي ديگر اہم شاہراہوں پر بس اڈے بن گئے۔

ٹرانسپوٹرز کہتے ہیں کہ 1965 سے یہ اڈے قائم ہیں،اگر بس ٹرمنل ختم کردیا گیاتو ہزاروں لوگ بےروزگار ہوجائیں گے۔

پروونشیل ٹرانسپورٹ اتھارٹی نےیوسف گوٹھ ٹرمنل سےنذرچورنگی براستہ اٹک سیمنٹ فیکڑی کا روٹ الاٹ کیا ہے لیکن انتظامیہ احکامات پرعمل کرانے میں ناکام ہے۔

Tabool ads will show in this div