تجاوزات کیخلاف اسلام آبادمیں سی ڈی اے کاآپریشن دوسرےروزبھی جاری

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/09/Heli-CDA-Operation-Ex-09-09.mp4"][/video]

اسلام آباد میں کشمیر ہائی وے پر تجاوزات کے خلاف سی ڈی اے آپریشن ميں تيزي آگئي، جہاں دوسرے روز بھي غيرقانوني عمارتيں گرانے کا سلسلہ جاري ہے۔ وزیر مملکت داخلہ شہریار آفریدی کا کہنا ہے کہ اداروں ميں موجود کالي بھيڑيوں کو نہيں چھوڑيں گے۔

اسلام آباد میں کشمیر ہائی وے کے اطراف سیکٹر جی 12 میں مالکان کے احتجاج کے باوجود تجاوزات کے خلاف آپریشن جاری ہے۔ سی ڈی اے حکام کی جانب سے غیر قانونی شادی ہالز سمیت 18 عمارتوں کو مسمار کردیا گیا ہے، جب کہ تجاوزات کے خلاف آپریشن میں سی ڈی اے کے ساڑھے 300 سے زائد اہلکار آپریشن میں شریک ہیں۔

تجاوزات کے خلاف آپریشن اسلام آباد تک جاپہنچا

سی ڈی اے حکام کا کہنا ہے کہ آج اتوار کو کشمیر ہائی وے کلیئر کردیں گے۔ وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے بھی کشمیر ہائی وے کا دورہ کیا۔ پولیس اور سی ڈی اے کے مشترکا آپریشن کا جائزہ لیا۔

 

اس موقع پر ڈپٹی کمشنر اسلام آباد اور ممبر اسٹیٹ سی ڈی اے نے وزیر مملکت کو آپریشن پر بریفنگ دی جب کہ شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ تجاوزات کے خلاف آپریشن تبدیلی کا نشان ہے، این او سی اور اجازت کے بغیر کی گئی تمام تعمیرات گرائی جائیں گی۔

غیرقانونی تعمیرات کے خلاف آپریشن جاری رہےگا،فوادچوہدری

یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ گزشتہ روز ہفتہ کو بھي سيکٹر12 ميں مشہور فاسٹ فوڈ کي برانچ سميت 12 عمارتيں گرادي گئي تھيں۔ وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے آپريشن کا دائرہ ديگرشہروں تک پھيلانے کا اعلان کيا تھا۔

anti encrochment cell

Tabool ads will show in this div