شہید حوالدار لقمان کی بیٹیاں آج بھی اپنےبابا کو یاد کرتی ہیں

Sep 06, 2018
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/09/Hawaldar-Luqman-Shaheed-isb-Pkg-05-09-1.mp4"][/video]

ارض پاک کی خاطر قربانیوں کا سلسلہ صرف چھ ستمبر تک ہی محدود نہیں رہا۔ حوالدار محمد لقمان نے نو سال قبل دھرتی کی خاطر جان کا نذرانہ پیش کیا۔ ان کی بيٹيوں کو اپنے بہادر باپ پر فخر ہے ۔

شہید حوالدار محمد لقمان نے سوات آپریشن کے دوران ملک ميں قیام امن کی خاطر اپنی زندگي نچھاورکي ۔ شہید محمد لقمان کی بیوہ اور بچے آج بھی ان کو فخر سے یاد کرتے ہیں۔

گھر کے بڑے کا سایہ نہ رہا لیکن ان کي ياد آج بھي شریک حیات کا سرمايہ ہے۔ان کی بیوہ نےبتایاکہ ان کو شہادت کی بہت خواہش تھی،اکثرکہاکرتےتھےکہ ویسے انسان کو مرنا ہے تو شہادت کی موت کیوں نہ مرے۔

شجاعت و بہادری کی مثال قائم کرنے پرحکومت کی جانب سے شہید لقمان کو تمغہ بسالت اوراعزازی شیلڈ سے بھی نوازا گیا۔

شہید محمد لقمان کی طرح جس قوم کے جوان بارود کی یلغار کے سامنے اپنے سینے کو ڈھال بنانے کی جرات رکھتے ہوں،اس کودنیا کی کوئی طاقت شکست نہیں دے سکتی۔

6TH SEPTEMBER

hawaldar luqman

Tabool ads will show in this div