نیب ریفرنس میں نامزد وزیراعظم کے مشیر بابر اعوان مستعفی

Sep 04, 2018

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/09/Nandipur-Reference-Isb-Pkg-04-09.mp4"][/video]

وزیراعظم کے مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان نے استعفیٰ دے دیا، احتساب عدالت میں نندی پور منصوبے میں تاخیر کے معاملے پر دائر ریفرنس میں انہیں بھی نامزد کیا گیا ہے۔

مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان نے عہدے سے استعفیٰ دے دیا، انہوں نے اپنا استعفیٰ وزیراعظم عمران خان کو بھجوادیا۔

بابر اعوان کا کہنا ہے کہ قانون کی حکمرانی مجھ سے شروع ہونی چاہئے، عدالت میں ڈٹ کر اپنی بے گناہی ثابت کروں گا، کرسی سے چمٹ کر نہیں رہوں گا۔

نندی پور منصوبے میں تاخیر کے معاملے پر نيب نے ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کیا ہے جس میں وزیراعظم کے مشیر برائے پارلیمانی امور اور سابق وزیر قانون بابر اعوان سابق وزیراعظم راجا پرویز اشرف کو ملزم نامزد کیا گیا ہے، دیگر ملزمان میں سیکریٹریز قانون مسعود چشتی اور ریاض کیانی، سابق سیکریٹری وزارت پانی و بجلی شاہد رفیع بھی شامل ہیں۔

ملزمان پر نندی پور پاور پلانٹ کی تنصیب میں تاخیر کرکے قومی خزانے کو 27 ارب کا نقصان پہنچانے کا الزام ہے۔

نیب کے مطابق ملزمان کی غفلت کے باعث نندی پور منصوبے میں تاخیر ہوئی، سپریم کورٹ نے منصوبے میں تاخیر پر رحمت جعفری کمیشن قائم کیا، جس نے رپورٹ میں وزارت قانون کے افسران کو تاخیر کا ذمہ دار قرار دیا، تحقیقات سے ثابت ہوا کہ ملزمان نے جان بوجھ کر ذمہ داری پوری نہیں کی۔

IMRAN KHAN

adviser to pm

Babar awan

Tabool ads will show in this div