موسم گرما میں چھتریوں کی بہار

Sep 04, 2018
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/09/Stylish-Umbrelaa-Isb-Pkg-02-09.mp4"][/video]

کمزور سی تاروں اور گز بھر کپڑے کا نازک سا پھول لیکن حوصلہ ایسا کہ مالک کیلئے بارش تو کیا دہکتے سورج سے بھی بھِڑ جائے۔خود جھلسے مگر آپ کو جلنے سے بچائے ، اس ہی کو تو چھتری کہتے ہیں جس کے کئی رنگ اورکئی روپ ہوتےہیں۔

موسم گرما میں حسن کو گھنائےجانے سے بچانےکےلیے چھتری کا استعمال بہترین بچاؤ ہوتاہے لیکن رنگی برنگی خوشمنا چھتری سے چار چاند لگ جاتےہیں۔

چشمہ تو بس آنکھوں کو بچاتا ہےلیکن یہ ہلکا پھلکا پھول کھلے تو پھر سورج کی شعاعیں صنف نازک سے بھلا کیونکر ٹکرائیں ۔ میچنگ، کنٹراسٹ، ہلکے گہرے، سب رنگ ہرجگہ آپ پر خوشنما لگتےہیں۔ کڑی دھوپ میں بدلی بن کر ہمقدم، کوئی جہاں جہاں جائے، یہ وہیں سب نبھائے ۔

روپ اور دھوپ کی آنکھ مچولی میں چھتری کا ساتھ نیا نہیں  مگر انداز ہردور میں نیا ہوتا ہے۔ کوئی زمانہ تھا کہ چھتریوں کی دنیا بلیک اینڈ وائٹ ہوا کرتی تھی لیکن اب تو جیسے سارے شوخ اور چنچل رنگ انہی میں سمٹ آئے ہوں ۔

Umbrella

Tabool ads will show in this div