صدارتی انتخاب کیلئے بلوچستان اسمبلی میں ووٹنگ جاری

صدارتی الیکشن کے حوالے سے بلوچستان اسمبلی کے 65 میں سے 61 اراکین حق رائے دہی استعمال کریں گے، جب کہ پولنگ دس بجے سے شام چار بجے تک جاری رہے گی چیف جسٹس بلوچستان ہائی کورٹ جسٹس طاہرہ صفدر پریذائیڈنگ افسر ہیں۔

صدارتی انتخاب کیلئے بلوچستان اسمبلی میں پہلا ووٹ ووٹ ایم ایم اے کے عبدل واحد صدیقی نے کاسٹ کیا،دوسرا ووٹ بھی ایم ایم اے کے ملک سکندر ایڈووکیٹ جب کہ تیسرا ووٹ بھی ایم ایم اے کے یونس عزیز زہری نے کاسٹ کیا۔

بلوچستان اسمبلی کے 65 ارکان میں سے 61 ارکان ووٹ کاسٹ کریں گے ،پی بی 35 مستونگ کے انتخابات امیدوار نوابزادہ سراج رئیسانی کی شہادت کے بعد ملتوی ہوگئے تھے  جب کہ پی بی 41 واشک اور پی بی 26 کوئٹہ کی نشستوں کے نتائج کا تاحال نوٹفکیشن جاری نہیں ہوا ہے ۔پی بی 40 وڈھ کی نشست کامیاب امیدوار سردار اختر جان مینگل نے چھوڑ دی تھی ۔

صوبائی اسمبلی ایوان میں بلوچستان عوامی پارٹی 24 نشستوں کے ساتھ سب سے بڑی جماعت ہے۔متحدہ مجلس عمل 10  سیٹوں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے ،بلوچستان نیشنل پارٹی مینگل کی 9 جب کہ پاکستان تحریک انصاف کے ارکان کی تعداد 8 ہے ،اسی طرح عوامی نیشنل پارٹی کی نشستیں 4 ہیں اور بی این پی عوامی کے ارکان 3 ہیں  جب کہ ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی، پی ایم ایل ن ، جمہوری وطن پارٹی اور پی کے میپ کا ایک ایک رکن ایوان کا حصہ ہے

بلوچستان اسمبلی اور اس کے اطراف میں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں جس کی زمہ داری پولیس اور ایف سی نے سنبھالی لی ہے۔

میڈیا کو کیمروں سمیت اسمبلی جانے پر پابندی عائد کردی گئی ہے جب کہ کیمرے والا موبائل بھی اسمبلی میں لے جانے پر پابندی عائد ہے۔

واضع رہے کہ ملک کے 13 ویں صدر مملکت کیلئے سینٹ، قومی اور چاروں صوبائی اسمبلیوں کے 1121 ووٹر خفیہ رائے شماری کے ذریعے آج صدر پاکستان کا انتخاب کر رہے ہیں

aitzaz ahsan

Molana fazal ur rehman

Dr Arif Alvi

voting for president

Tabool ads will show in this div