پانچ سال میں پنجاب پولیس کے 1463 مبینہ مقابلے

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/08/MA-PUNJAB-POLICE-ENCOUNTERS-PKG-26-08-ZAKI.mp4"][/video] پنجاب پولیس نے گزشتہ پانچ سال میں چودہ سو تریسٹھ مبینہ مقابلے کیے۔ تقریبا سولہ سو  جرائم پیشہ افراد کو مارنے کا دعویٰ کیا گیا ۔ عابد باکسر کے انکشاف کے بعد پنجاب پولیس کے مبینہ مقابلوں کو بریک لگ گئی ۔ پنجاب پولیس کے پچھلے پانچ سال میں 1463 مبینہ مقابلے ہوئے۔ جبکہ 1596 سابقہ ریکارڈ یافتہ اور جرائم پیشہ افراد کو مارنے کا دعویٰ کیا گیا۔ سال 2015 میں 359 مبینہ مقابلوں میں سب سے زیادہ 450 ملزمان ٹھکانے لگائے گئے ۔ مبینہ مقابلوں میں 39 پولیس اہلکار بھی مارے گئے۔ ڈٰی آئی جی آپریشنز لاہور شہزاد اکبر کے مطابق، پولیس کو اپنا دفاع کرنا ہوتا ہے۔ وہ ہم ضرور کرتے ہیں ۔ جہاں تک ملزمان کو پکڑ کر جعلی مقابلے میں مارنے کا تعلق ہے۔ اس پر ہماری پالیسی واضح ہے۔ کسی کو پکڑ کر مارنا ہماری پالیسی کا حصہ نہیں ہے۔ ڈی آئی جی آپریشنز لاہور تو کہتے ہیں ۔ ملزمان کی قسمت کا فیصلہ تو عدالت کرتی ہے۔ لیکن وہ یہ بھول گئے 2017 میں قصور میں بچی سے زیادتی اور قتل کے الزام میں مارے جانے والا ملزم بےگناہ تھا ۔ یہی نہیں رواں سال ہی فیصل آباد میں ناکے پر پولیس نے دو بھائیوں کی جان لی ۔ جبکہ رنگ روڈ پر 14 سال کا بے گناہ ڈولفن فورس کی گولی لگنے سے جاں بحق ہوا۔ ورثاء کے احتجاج پر مقدمہ درج کرنے سے زیادہ کچھ نہ ہوا ۔ عابد باکسر کے انکشافات کے بعد ان مقابلوں کو بریک تو لگ گئی ۔ لیکن جرائم میں ہوشربا اضافہ ہوگیا ہے۔ صرف عیدالاضحیٰ کے تین دنوں میں لاہور میں 70 سے زائد وارداتیں ریکارڈ کی گئیں ۔

police encounters

Tabool ads will show in this div