شہری تشدد کیس میں عمران شاہ نے جواب جمع کرا دیا

شہری تشدد کیس میں پاکستان تحریک انصاف کے ایم پی اے عمران شاہ نے آج پیر کو جواب سپریم کورٹ میں جمع کرا دیا۔ عمران علی شاہ نے جواب میں اظہار ندامت کیا اور صفائیاں دیں ہیں۔ دو دن قبل سپریم کورٹ نے کارساز روڈ پر شہری پر تشدد کرنے کے الزام میں عمران علی شاہ کو نوٹس جاری کیا تھا۔ جواب میں عمران علی شاہ نے تشدد کا واقعہ ذاتی دفاع قرار دے دیا۔ اپنے جواب میں انکا کہنا تھا کہ شہری داؤد پارکنگ میں کھڑی گاڑی کو بار بار ٹکر مار رہا تھا۔ ان کے مطابق، پارکنگ میں کھڑی گاڑی کے ڈرائیور نے جان بچانےکی کوشش کی۔ شہری داؤد نے غلیظ زبان استعمال کی جو ناقابل برداشت تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ شہری داؤد کو اپنے دفاع میں تشدد کا نشانہ بنایا۔ خدشہ تھا کہ داؤد مجھے نقصان نہ پہنچا دے۔ عدالت میں دیے گئے جواب میں انہوں نے کہا کہ داؤد چوہان سے معافی مانگنا اخلاقی ذمہ داری سمجھا۔ داؤد چوہان نے معذرت قبول کرتے ہوئے معاملہ رفع دفع کر دیا۔ جواب میں انہوں نے موقف اختیار کیا کہ واقعہ کی ویڈیو میں سارا فوکس مجھ پر ہی تھا۔ جبکہ ویڈیو میں داؤد چوہان کا ردعمل نہ فلمایا گیا نہ ہی دکھایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ واقعہ پر میرا ردعمل غیر ارادی اور بدنیتی پر مبنی نہیں تھا۔ فریقین میں صلح صفائی کے بعد 14 اگست کو معاملہ ختم ہوُچکا ہے۔ عمران علی شاہ نے عدالت سے استدعا کی کہ معافی قبول کرتے ہوئے کیس سے باعزت بری کرے۔

PTI

chief justice saqib nisar

Imran ali shah

citizen torture case

Dawood Chohan

Tabool ads will show in this div