کالمز / بلاگ

کچھ کر دکھاؤ، انعام پاؤ

احتجاج رنگ لایا، معاملہ خوش اسلوبی سے طے پایا، اب کچھ کر دکھانے کا وقت آیا ہے، پاکستان ہاکی ٹيم جکارتہ ميں ہے اور ايشين گميز ميں ٹائٹل کے حصول کیلئے کوشاں ہے، پاکستان کا قومی کھيل ہاکی گزشتہ کئی برسوں سے زوال کی پستیوں میں ہے، ماضی ميں قومی ہاکی ٹیم نے دنيائے ہاکی کا ہر ٹائٹل اپنے نام کيا تھا، اب پاکستان کی ہاکی دنيا ميں 13ويں نمبر پر ہے، ایسے زوال سے نکلنے کیلئے کچھ غیرمعمولی اقدامات وقت کا تقاضا ہیں لیکن معاملہ اس وقت برعکس ہوگیا جب گزشتہ دنوں قومی کھیل کے قومی کھلاڑيوں نے بائیکاٹ کردیا، پريکٹس چھوڑ کر بیٹھ گئے، کپتان محمد رضوان سينئر کی قيادت ميں ٹيم کے کھلاڑيوں نے سنگین معاشی ابتری کیخلاف احتجاج ريکارڈ کرايا، ہاکی ٹيم کے بائيکاٹ کی خبر پاکستان کے ہر ٹی وی چينل پر چلائی گئی ہر اخبار کی شہ سرخیوں کی زينت بنی ليکن اگلے ہی دن کپتان محمد رضوان نے سياستدانوں کی طرح بيان بدلا اور ميڈيا پر بيان داغ ديا کہ ہم نے کھيلنے کا بائيکاٹ نہيں کيا بلکہ اپنا احتجاج ريکارڈ کرايا ہے کہ ہميں ہمارے پيسے ديئے جائيں۔

کھلاڑيوں کا بائيکاٹ پری پلان تھا يا کسی کے اشاروں پر کيا گيا يہ عليحدہ مسلئہ ہے، کھلاڑيوں کے احتجاج پر حکومت نے کان نہيں دھرے اچھا کيا، پاکستان ہاکی فيڈريشن کو کروڑوں روپے کی گرانٹ دی جاچکی ہے، اس گرانٹ کے بعد ہاکی ٹيم نے کون سا ميدان مار ليا۔ چيمپئنز ٹرافی کھيلنے گئے 6 ٹيموں نے حصہ ليا اور چھٹے نمبر پر آئے، ورلڈ کپ کیلئے کواليفائی نہيں کرسکے، کواليفائنگ راؤنڈ کے مقابلے ميں پاکستان کی ٹيم ساتويں نمبر پر آئی جبکہ 5 ٹيموں نے کواليفائی کرنا تھا، ارجنٹينا کو اولمپک چيمئين اور بھارت کو ايشاء کی چيمپئن ہونے کے باعث براہ راست ورلڈ کپ ميں انٹری مل گئی، جب ايونٹ سے 2 ٹيميں کم ہوگئيں تو پاکستان کو ساتويں سے پانچويں پوزيشن پر آنے کے باعث ورلڈ کپ کھیلنے کی اجازت ملی۔

اب فيڈريشن کے حمايتی پريس کانفرنس کرکے يہ بتاتے ہيں کہ چيمپئنز ٹرافی ميں ٹيم نے اولمپک چيمپئن ارجنٹينا کو شکست دی، فيڈريشن کے حمايتيوں کو يہ بھی بتانا چاہئے کہ چيمپئنز ٹرافی ميں بيلجیئم سے 2 ميچ ہارے، پانچويں پوزيشن کا ميچ ہار کر چھٹی پوزيشن پر آئے، اگر ہم ماضی پر ايک نظر ڈاليں تو پاکستان ہاکی ٹيم کے کھلاڑيوں کے پاس نوکری بھی نہيں تھی اور ہاکی کا ہر ٹائٹل پاکستان کے پاس تھا، یہ ہوتا ہے ملک کیلئے کھيلنے کا جذبہ، 1984ء کے لاس اينجلس اولمپک ميں پاکستان نے سونے کا تمغہ سينے پر سجايا اور عوام نے بھی ٹيم کا والہانہ استقبال کيا، اس کے بعد کھلاڑيوں کو کسٹم اور پی آئی اے ميں ملازمتيں دی گئيں، اب تو کھلاڑيوں کے پاس نوکرياں بھی ہيں پھر بھی ايک ٹائٹل اپنے ملک کیلئے نہيں لاسکتے۔ فيڈريشن کے فنڈز روکنے کا نگران حکومت کا اقدام بالکل ٹھیک تھا، حکومت پہلے ديئے گئے فنڈز کا آڈٹ کرائے اس کے بعد ٹيم کو کہے کہ ايشیئن گیمز ميں ميڈل لاؤ، اس کے بعد فنڈز ديئے جائيں گے، پہلے کچھ کر دکھاؤ، پھر انعام پاؤ، حکومت ہاکی فيڈريشن کو کارکردگی کی بنياد پر فنڈز جاری کرے اور عہدیداران سے باز پرس بھی کرے۔

pakistan sports

Players Protest

Tabool ads will show in this div