جنگ مسائل کا حل نہیں، سوچ سمجھ کر فیصلہ کیا جائے، سیاستدانوں کا مطالبہ

اسٹاف رپورٹ


اسلام آباد : جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ طالبان کیخلاف آپريشن کا فيصلہ جذبات کی بجائے عقل سے کيا جائے، منور حسن کا کہنا ہے لگتا ہے ن لیگ کی اکثریت آپریشن کی حامی نہیں۔


افغانستان ميں امن و امان سے متعلق اسلام آباد میں سیمینار کا اہتمام کيا گيا، جس سے خطاب کرتے ہوئے جے يو آئی سربراہ مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ افغانستان ميں معاملہ دہشتگردی کیخلاف جنگ کا نہیں، وسائل اور اقتصادیات پر بالادستی کا ہے، پاکستان کو اپنی ضرورتوں کا تعین کرنا ہوگا،  فوجی آپريشن مسئلے کا حل نہيں۔


اسپيکر قومی اسمبلی اياز صادق اور پی ٹی آئی کے شاہ محمود قريشی کا کہنا تھا کہ امريکی انخلاء کے بعد افغانستان کو لاوارث نہيں چھوڑنا چاہئے۔


سيمينار سے خطاب ميں سيد منور حسن کا کہنا تھا کہ وہ نہيں سمجھتے کہ ن ليگ کے ارکان کی اکثريت آپريشن کی حامی ہے ليکن ميڈيا کے ذريعے بيان جاری کيا گيا ہے، اس لئے وہ اسے مان ليتے ہيں۔


سيمينار ميں شريک مقررين نے افغانستان کے مستقبل پر تشويش کا اظہار کيا اور پڑوسی ملک سے متعلق واضح حکمت عملی بنانے کا مطالبہ کيا۔ سماء

کا

فیصلہ

D-Chowk

کر

Obama

energy

arsenal

lord

concern

Tabool ads will show in this div