سندھ اسمبلی ميں پی ٹی آئی کو اپوزیشن لیڈر لانے میں مشکلات کا سامنا

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/08/SA-OPPOSTION-GAME-KHI-PKG-06-08.mp4"][/video]

سندھ ميں حکومت تو پيپلز پارٹي کريگي مگر اپوزيشن ليڈر کس کا ہوگا ايم کيو ايم نے فردوس شميم نقوي کو ووٹ نہ دينا کا عنديہ دے ديا، ايم کيو ايم اور جي ڈي اے نے اپنے اپوزيشن ليڈر لانے کيلئے جوڑ توڑ شروع کردي ۔

سندھ اسمبلی ميں اپوزيشن ليڈر کس کا ہوگا، ايم کيوايم، پی ٹی آئی اور جی ڈی اے متحرک ہوگئی، اپوزیشن لیڈرلانے کيلئے ایم کیو ایم اور جي ڈي اے کي جوڑ توڑ جاری ہے۔

ترش بيان بازي کے بعد ايم کيوايم نے فردوس شميم نقوي کو ووٹ نہ دينے کا عنديہ دے ديا اور اپنا قائدِ حزبِ اختلاف لانے کے لئے جي ڈي اے سے مدد مانگ لي۔

لیکن گرينڈ ڈيموريٹ الائنس کيا مدد کرے وہ تو خود اپوزيشن ليڈر لانا چاہتي ہے ، پي ٹي آئي 22 ، ايم کيوايم 16 اور جي ڈي اے کي سندھ اسمبلی ميں 11 نشستيں ہيں، قائدِ حزبِ اختلاف کے لئے جي ڈي اے ٹرم کارڈ کا کردار ادا کرسکتي ہے۔

دوسري جانب پي ٹي آئي چيئرمين عمران خان نے اپنے سندھ کے کھلاڑيوں کو بني گالہ بلاليا 9 اگست کو اجلاس ہوگا اور اپوزيشن ليڈر کے لئے پي ٹي آئي کي جانب سے نام کا اعلان بھي ہوگا۔

 

PTI

sa

Tehreek insaaf

GDA

Tabool ads will show in this div