ریفرنسز کی منتقلی سے متعلق نواز شریف کی درخواست منظور

اسلام آباد ہائیکورٹ نے العزیزیہ اور فلیگ شپ (ہل میٹل) ریفرنسز کی دوسری عدالت میں منتقلی سے متعلق نواز شریف کی درخواست منظور کرلی، عدالت عالیہ نے دونوں ریفرنسز احتساب عدالت نمبر ایک سے احتساب عدالت نمبر 2 منتقل کرنے کا حکم سنادیا۔

سابق وزیراعظم نواز شریف نے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی تھی، جسٹس میاں گل اور جسٹس عامر پر مشتمل بینچ نے سماعت کے بعد 8 جون کو فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے نواز شریف کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز دوسری عدالت منتقل کرنے کا حکم دے دیا۔

نواز شریف کے وکیل نے استدعا کی تھی کہ جج محمد بشیر ایک ریفرنس میں نواز شریف کیخلاف فیصلہ سناچکے ہیں، شواہد اور ملزمان دوسرے کیس میں بھی مشترک ہیں، اس لئے انصاف کا تقاضہ ہے کہ ریفرنس دوسری عدالت میں منتقل کئے جائیں۔

نیب پراسیکیوٹر کی جانب سے ریفرنسز منتقلی کی درخواست پر اعتراض اٹھایا گیا تھا، ان کا کہنا تھا کہ شواہد ایک عدالت میں ریکارڈ ہوچکے ہیں، لہٰذا اسی عدالت میں ریفرنس مکمل ہونا چاہئے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے نواز شریف کی درخواست منظور کرتے ہوئے حکم دیا ہے کہ العزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز کی سماعت اب احتساب عدالت نمبر 2 میں ہوگی، ان ریفرنسز میں احتساب عدالت نمبر ایک میں 18، 18 گواہان کے بیانات قلمبند ہوچکے ہیں۔

اسلام آباد ہائیکورٹ کے 2 رکنی بینچ نے 8 جون کو نواز شریف کی درخواست پر فریقین کے دلائل کے بعد فیصلہ محفوظ کیا تھا۔

اسلام آباد ہائیکورٹ نے واضح کیا ہے کہ دونوں ریفرنسز پر احتساب عدالت نمبر ایک میں جہاں تک کارروائی ہوچکی ہے وہیں سے احتساب عدالت نمبر 2 میں کارروائی آگے بڑھائی جائے گی۔

نواز شریف، ان کی صاحبزادی مریم نواز اور داماد کیپٹن (ر) صفدر کو 6 جولائی کو بالترتیب 10، 7 اور ایک سال قید کی سزا سنائی تھی، صفدر کو 8 جولائی جبکہ نواز شریف اور مریم نواز کو 13 جولائی کو لندن سے پاکستان پہنچنے پر گرفتار کیا گیا تھا۔

MARYAM NAWAZ

Panama

Captain (r) Safdar

Alazizia

Tabool ads will show in this div