منی لانڈرنگ اسکینڈل، فریال تالپور کے خلاف ثبوت مل گئے

سندھ منی لانڈرنگ اسکینڈل میں پیپلز پارٹی کی رہنما اور آصف علی زرداری کی ہمشیرہ فریال تالپور کی جانب سے تین کروڑ روپے اویس مظفر کو دبئی منتقل کرنے کے ثبوت مل گئے ہیں ۔ ایف ائی اے حکام چھ اگست کو چیف جسٹس کے سامنے سوموٹو کیس میں ثبوت پیش کریں گے۔ سندھ منی لانڈرنگ اسکینڈل میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔ وفاقی تحقیقاتی ادارے کو فریال تالپور کی جانب سے رقم منتقلی کے ثبوت مل گئے ہیں۔ سماء کے نمائندے کے مطابق، جعلی اکاؤنٹس سے تین کروڑ روپے اویس مظفر کو منتقل کئے گئے۔ ایف آئی اے کو رقم منتقل کرنے کے دستاویزات مل گئے ہیں۔ ایف آئی اے حکام کے مطابق، چھ اگست کو ثبوت چیف جسٹس کے سامنے پیش کرینگے۔ اس سے پہلے تیس جولائی کو فریال تالپور نے میگا منی لانڈرنگ کیس میں ایف آئی اے کا عبوری چالان عدالت میں چیلنج کردیا تھا۔ فریال تالپور نے درخواست میں مؤقف اختیار کیا ہےکہ ایف آئی آر میں کسی قسم کی منی لانڈرنگ کا ذکر نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ چالان میں انکا کوئی کردار واضح نہیں اور الزامات سے انکا کوئی تعلق نہیں۔ یاد رہے کہ وفاقی تحقیقاتی ادارہ ( ایف آئی اے) سندھ میں منی لانڈرنگ کیس میں 32 افراد کے خلاف تحقیقات کر رہی ہے، جن میں آصف علی زرداری اور فریال تالپور بھی شامل ہیں۔ اسی سلسلے میں نجی بینک کے سابق صدر حسین لوائی کو گرفتار کیا گیا تھا۔ گزشتہ دنوں منی لانڈرنگ کیس میں ایف آئی کے طلب کرنے پر فریال تالپور پیش نہیں ہوئیں اور انہوں نے مزید مہلت طلب کرلی ہے جب کہ پی پی رہنما نے بینکنگ کورٹ سے ضمانت بھی کرارکھی ہے۔ واضح رہے کہ 12 جولائی کو سپریم کورٹ میں مبینہ جعلی بینک اکاؤنٹس سے متعلق از خود نوٹس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس ثاقب نثار نے ایف آئی اے کو ہدایت کی تھی کہ آصف علی زرداری اور فریال تالپور کو الیکشن تک نہ بلایا جائے۔  

FARYAL TALPUR

ASIF ZARDARI

Owais Muzaffar

SINDH BANK

Summit Bank

Sindh money laundering scandal

Sindh's biggest corruption scandal

Tabool ads will show in this div