حفیظ سے استعفیٰ طلب نہیں کیا، چند ماہ میں بڑے فیصلے ہونگے، نجم سیٹھی

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ

لاہور : چیئرمین پی سی بی نجم سیٹھی نے کہا ہے کہ محمد حفیظ نے ذمہ داری کا مظاہرہ کیا، بورڈ کیلئے راستہ کھولنے پر ان کا شکر گزار ہوں، 4، 5 ماہ میں اچھے فیصلے ہوں گے، بہترین لوگ لائیں گے۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ نجم سیٹھی نے کہا کہ ٹیم کے مینجرز اور کپتان سے بات چیت ہوئی، ورلڈ ٹی 20 میں کارکردگی کا بغور جائزہ لیا جارہا ہے، سیمی فائنل میں نہیں پہنچے، 4، 5 نمبر پر تو ہیں، میڈیا کی تنقید میں وزن تھا، غلطیاں ہوئی ہیں، اچھا ہوا سب کچھ سامنے آگیا ہے۔

وہ کہتے ہیں کہ اب سب کو معلوم ہوگیا کہ 2 سیریز کا کنٹریکٹ کیوں دیا گیا، میں نے کپتان کو استعفی کا نہیں کہا تھا، ٹیم میں کوئی گروپنگ نہیں تھی، سلیکشن، قیادت اور کوچنگ کی غلطیاں سامنے آگئیں، راشد لطیف تگڑے آدمی ہیں، سفارشی سلیکشن نہیں ہوگی، راستہ کھلا ہے، 4، 5  ماہ میں نئی ٹیم اور کوچز بنانے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ سلیکشن کمیٹی وسیم اکرم کی منتخب کردہ ہے، محمد اکرم کا معاہدہ 2 سال کا ہے، انہیں فارغ نہیں کیا گیا، شاہد آفریدی کی باتوں پر میڈیا کو کیا اعتراض ہے؟، نئے کپتان کے انتخاب کیلئے مجھ پر کوئی دباؤ نہیں۔

وہ کہتے ہیں کہ بگ تھری معاملے پر بات کرنے 7 اپریل کو دبئی جارہا ہوں،

15 اپریل کو مینجمنٹ سے ملاقات ہوگی، فیلڈنگ میں کمزور ہیں، بہترین فیلڈنگ کوچ چاہئے، آسٹریلیا، نیوزی لینڈ کے دورے کی تیاریاں کرنی ہیں، 2، 3 کیوریٹرز کو بھی پاکستان بلایا جائے گا، ایسا کوچ چاہئے جو چن چن کر کھلاڑیوں کے ساتھ کام کرے، وقار یونس کیلئے ہمارے دروازے کھلے ہیں۔ سماء

convicts

Tabool ads will show in this div