سابق وزیراعظم نواز شریف کی اڈیالہ جیل میں طبیعت ناساز

Jul 29, 2018
[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/07/NF-Nawaz-Sharif-Ill-PKG-29-07-SANA.mp4"][/video]

اڈیالہ جیل میں قید نوازشریف کی طبیعت ناساز ہوگئی ہے۔انھیں اسپتال منتقل کرنے کی تجویززیرغورہے۔

جیل ذرائع کےمطابق نوازشریف کےبلڈ ٹیسٹ میں کلاٹس کی نشاندہی ہوئی ہے۔ جیل ذرائع نےبتایاہےکہ خون میں کلاٹس کےباعث نوازشریف کےدونوں بازؤں میں شدید درد ہے۔ پمزاسپتال کےڈاکٹرنعیم نے نوازشریف کوسی سی یو منتقل کرنےکی تجویزدی ہے۔

نوازشریف کی طبیعت سےمتعلق اڈیالہ جیل انتظامیہ نے پنجاب حکومت سے رابطہ کیاہے۔ پنجاب حکومت سےاجازت ملتے ہی نوازشریف کواسپتال منتقل کیا جائےگا۔ امکان ہےکہ نوازشریف کو راول پنڈی انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیولوجی میں منتقل کردیاجائےگا۔ اس حوالےسے فیصلے اگلے چند گھنٹوں میں متوقع ہے۔ جیل اور اسپتال کے اطراف سیکورٹی سخت کردی گئی ہے۔

نگراں وزیرداخلہ پنجاب شوکت جاوید نےبتایاکہ نوازشریف اسپتال میں نہیں رہنا چاہتےتاہم نوازشریف کو منتقلی کی تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ممکنہ طورپرنوازشریف کوایک سے دو روز تک اسپتال میں رکھاجاسکتاہے۔ اس حوالےسے نوازشریف کےذاتی معالج سے رابطےمیں ہیں۔

اس سے قبل نوازشریف کے گذشتہ روز بھی معمول کےٹیسٹ لئے گئے تھے جن میں خون کے ٹیسٹ بھی شامل تھے۔تاہم آج دوبارہ ہونےوالے ٹیسٹ میں تبدیلی کےباعث انھیں اسپتال منتقل کرنےکافیصلہ کیاجارہاہے۔

یاد رہے کہ احتساب عدالت نے 6 جولائی کو ایون فیلڈ ریفرنس کا فیصلہ سناتے ہوئے سابق وزیراعظم کو مجموعی طور پر 11 سال قید کی سزا کا حکم دیا تھا جس کے بعد 13 جولائی کو سابق وزیراعظم کے لندن سے پاکستان آنے پر گرفتار کر کے اڈیالہ جیل منتقل کردیا تھا۔

Tabool ads will show in this div