پاکستان فٹبال ٹیم کے سابق کپتان غلام سرور فاقوں کا شکار، اعزازات جلاڈالے

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ

کراچی : بارہ سال قومی فٹبال ٹیم کی نمائندگی کرنیوالے غلام سرور بلوچ در در کی ٹھوکریں کھارہے ہیں، دلبرداشتہ ہوکر اُنہوں نے اپنے میڈلز، سرٹیفکیٹس اور تمام قیمتی اثاثے جلا ڈالے۔

لیاری کی تنگ گلی میں رہائش پذیر فٹ بال ٹیم کے کپتان غلام سرور بلوچ 1969ء میں قومی ٹیم میں شامل ہوئے، جان لڑاکر 12 سال تک قومی ٹیم کیلئے کھیلتے رہے، غلام سرور اب انتہائی مشکل حالات میں زندگی گزار رہے ہیں۔

غلام رسول ٹیم سے 1981ء میں ریٹائر ہوئے اس کے بعد کچھ دن تو سکون سے گزر گئے لیکن جمع پونجی ختم ہونے پر نوکری تلاش کی تو کسی نے توجہ نہیں دی۔

غلام سرور نے اشتعال میں آکر گھر میں موجود میڈلز اور سرٹیفکیٹس جلاڈالے، غلام سرور کو ٹیم سے ریٹائر ہوئے 33 سال ہوچکے ہیں، اب پرانی تصاویر اور چند ٹرافیاں ہی ان کی یادوں کا سہارا ہیں۔

62 سالہ غلام سرور کا کہنا ہے کہ فیڈریشن اور ایسوسی ایشن بطور کوچ ان کی خدمات سے فائدہ اٹھاسکتی ہیں، ملک کی خدمت کرنیوالے لیجنڈ کھلاڑیوں کی دیکھ بھال کا مناسب انتظام ہوجائے تو کھلاڑیوں کی مشکلات کم ہوسکتی ہیں۔ سماء

european

success

ghost

netflix

Tabool ads will show in this div