شیخ رشید کیلئے سپریم کورٹ سے بھی بری خبر

Jul 24, 2018

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/07/NA-60-Pettition-Dimissed.mp4"][/video]

سپریم کورٹ نے بھی این اے 60 راولپنڈی میں انتخابات کرانے کی شیخ رشید کی استدعا مسترد کردی، چیف جسٹسں کا کہنا تھا شیخ رشید واک اوور نہ مانگیں، وہ ایک اور سیٹ پر لڑ رہے ہیں، وہاں پتہ لگ جائے گا۔

سپريم کورٹ ميں اليکشن کمیشن کا فيصلہ برقرار، چیف جسٹس کہتے ہیں کہ این اے 60 پر الیکشن کرانا شیخ رشید کو واک اوور دینے کے مترادف ہوگا، عدالت عظمیٰ نے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ کی درخواست پر فیصلہ دے دیا۔

عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کے وکیل نے عدالت میں مؤقف اپنایا کہ الیکشن کسی کی نااہلی پر ملتوی نہیں ہوسکتا، مریم نواز کی نااہلی پر الیکشن ملتوی نہیں ہوئے۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے قرار دیا کہ ووٹر کا حق سب سے زیادہ ہے، ایک بڑی جماعت کے امیدوار کے باہر ہونے پر حق رائے دہی متاثر ہوتا ہے۔ جسٹس عمر عطاء بندیال کا کہنا تھا کہ کہ مریم نواز کے حلقے میں مسلم لیگ ن کا متبادل امیدوار موجود تھا۔

عدالت عظمیٰ سے شيخ رشيد کو فوری ریلیف تو نہ ملا لیکن 3 رکنی بینچ نے درخواست سماعت کیلئے منظور کرتے ہوئے اگلے ہفتے کیلئے نوٹس جاری کردیئے ہيں۔

CJP

NA 125

NIC

ELECTIONS2018

#GE2018

NA-60

#ElectionPakistan

Maryam Nawaz Election 2018

#NikloPakistanKiKhatir

Tabool ads will show in this div