سانحہ مستونگ،دہشتگردی کا ایک اور بڑا حملہ

بلوچستان میں دہشتگردی کا بڑا حملہ،دہشتگردوں نے مستونگ کے علاقے درینگڑھ میں بلوچستان عوامی پارٹی کے  امیدوار نوابزادہ سراج رئیسانی کے انتخابی جلسے میں دھماکا کیا،دھماکا اتنا شدید تھا کہ جلسہ گاہ میں ہرطرف تباہی پھیل گئی،لاشیں بکھر گئیں،جاں بحق افراد کی تعداد ایک سو اٹھائیس ہو گئی،ایک سو بائیس افراد زخمی بھی ہوئے جو کوئٹہ  اور مستونگ کے مختلف اسپتالوں میں زیر علاج ہیں۔

عینی شاہدین کے مطابق دھماکے نوابزدہ سراج رئیسانی جوں ہی خطاب کیلئے سٹیج پر آئے تو دھماکہ ہوا۔ سراج رئیسانی شدید زخمی ہوئے اور کوئٹہ کے سی ایم ایچ میں دم توڑ گئے،واقعہ کے خلاف بلوچستان عوامی پارٹی نے تین روز سوگ کا اعلان کیا ہے ۔

نوابزادہ سراج رئیسانی پی بی پینتیس مستونگ سے اپنے بڑے بھائی سابق وزیراعلیٰ نواب اسلم رئیسانی کے مد مقابل الیکشن لڑرہے تھے،ان کے بھائی نوابزدہ لشکری رئیسانی کے مطابق نوابزادہ سراج رئیسانی کی نماز جنازہ آج دوپہر تین بجے سراوان ہاؤس کوئٹہ میں ادا کی جائے گی جبکہ تدفین ان کے آبائی علاقے کانک میں ہوگی۔

sucide bomber

terrorist attack

Election 2018

Mastung Attack

Tabool ads will show in this div