ن لیگ کی قیادت کے خلاف مقدمہ درج

Jul 09, 2018

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/07/Safdar-Arrest-Upd-08-07.mp4"][/video]

راول پنڈی میں مسلم لیگ ن کے رہنما، سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کے داماد اور مریم نواز کے شوہر کیپٹن (ر) صفدر کے ریلی نکالنے پر ن لیگ کے 15 رہنماؤں کے خلاف مقدمہ درج کرلیا گیا۔

مقدمے میں کیپٹن (ر) صفدر، چوہدری تنویر، دانیال چوہدری، راجہ حنیف ، شیخ ارسلان، ضیاء اللہ شاہ سمیت 15 افراد کو نامزد کیا گیا ہے۔

مجرم محمد صفدر اڈیالہ جیل منتقل

مقدمہ راولپنڈی کے تھانہ وارث خان کے ایس ایچ اومحمد ارحم کی مدعیت میں درج کیا گیا ، اس مقدمے میں سیکڑوں نامعلوم افراد کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

محمد صفدر کو اڈیالہ جیل منتقل کرنے کی ویڈیو

مقدمے کے متن میں کہا گیا ہے کہ نیب عدالت سے سزا یافتہ کیپٹن (ر) صفدر نے ریلی کی قیادت کی اور سڑک بلاک کی، نامزد ملزمان نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کی اور جرم کا ارتکاب کیا۔

 

تھانہ وارث خان میں درج مقدمہ نمبر 518 میں 3/4 ایمپلی فائر ایکٹ کی دفعہ بھی شامل کی گئی ہے جبکہ یہ مقدمہ دفعہ  341 ,188 ,147 ,149 اور3/7 ایمپلی فائرایکٹ کی خلاف ورزی کے تحت درج کیا گیا ہے۔ مقدمے میں مسلم لیگ ن کے 2صوبائی اسمبلی اور ایک قومی اسمبلی کے امیدوار بھی نامزد ہیں۔

ڈرامائی گرفتاری

واضح رہے کہ اتوار کے روز دن بھر راول پنڈی کی سڑکوں پر آنکھ مچولی کے بعد کیپٹن صفدر نے شام کو نیب ٹیم کے آگے خود کو گرفتاری کے لیے پیش کیا۔ پنجاب کے تیسرے بڑے شہرمیں سابق وزیر اعظم کے داماد نیب کے اہلکاروں کی پکڑ سے بچتے رہے۔ کیپٹن صفدر کی گرفتاری کے دوران کئی ڈرامائی موڑ آئے۔ محمد صفدر لیگی کارکنان کے جھرمٹ میں لیاقت باغ پہنچے اور کارکنوں کا لہو گرماتے رہے۔ ایک ڈرامائی موڑ پر مشتعل متوالوں نے انکو نیب ٹیم کی گرفت سے چھڑا لیا۔

سسپنس سے بھرپو فلم

مانسہرہ میں احتساب بیورو کے ناکام چھاپوں کے بعد انہوں نے اپنے آڈیو پیغام میں گرفتاری دینے کا اعلان کیا تھا۔ بڑے جلوس کے ہمراہ راولپنڈی میں داخل ہونے والے کیپٹن صفدر کیخلاف پولیس نے بروقت کارروائی نہیں کی۔ اس سے پہلے نیب کی ٹیم نے صرافہ بازار سے سابق رکن اسمبلی کو گرفتار کیا۔  نیب کے ہاتھوں کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کی گرفتاری کے بعد،  مسلم لیگ نون کے کارکنوں نے زبردست مزاحمت کرتے ہوئے انکو نیب ٹیم کی گرفت سے چھڑا لیا۔ کیپٹن صفدر ریلی کی قیادت کرتے ہوئے سکستھ روڈ پہنچے۔ اور کارکنان کو ہدایت کی وہ گرفتاری میں رکاوٹ نہ ڈالیں۔ کیپٹن صفدر کی گرفتاری پر ناراض متوالوں نے نیب کی گاڑی پر احتجاجا مکے برسا دئیے۔ اس موقع پر نیب آفس کے اطراف پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی۔ احتساب بیورو کی ٹیم کیپٹن صفدر کو گرفتاری کے بعد بکتر بند گاڑی میں سوار کر کے نیب میلوڈی آفس لے گئی ۔

MARYAM NAWAZ

CAPTAIN SAFDAR

aven field Reference Case

Tabool ads will show in this div