بلاول بھٹو زرداری کو اوچ شریف دربار پر حاضری سے روک دیا گیا

اوچ شریف میں سیکیورٹی اداروں نے بلاول بھٹو کو دربار پر حاضری سے روک دیا گیا، سیکیورٹی اداروں کے مطابق اندھیرے کے باعث شرپسند عناصر نشانہ بناسکتے ہیں۔ فرحت اللہ بابر کہتے ہیں کہ بلاول کو کچھ ہوا تو ذمہ دار انتظامیہ اور پولیس ہوگی، سیکیورٹی انتظامات یقینی بنائے جائیں۔

چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو زرداری انتخابی مہم کے سلسلے میں کراچی تا خیبر تک ریلی کی قیادت کررہے ہیں، ان کا قافلہ سندھ کے مختلف شہروں سے ہوتا ہوا پنجاب پہنچ چکا ہے۔

بلاول بھٹو زرداری کا قافلہ اوچ شریف پہنچ گیا، جہاں انہوں نے اپنے کارکنوں کے ہمراہ مزار پر حاضری دینا تھی تاہم پی پی پی چیئرمین کو دربار میں داخل ہونے سے روک دیا گیا ہے۔

نمائندہ سماء کے مطابق سیکیورٹی اداروں نے اندھیرے کے باعث بلاو بھٹو زرداری کو دربار پر حاضری سے روکا، ان کا مؤقف ہے کہ شرپسند عناصر اندھیرے کا فائدہ اٹھا کر انہیں نشانہ بناسکتے ہیں۔

پیپلزپارٹی کے قائدین اوچ شریف دربار پر جانے کیلئے بضد ہیں تاہم بلاول بھٹو زرداری کے قافلے کو کافی دیر سے مزار پر راستے پر روکا ہوا ہے۔

پیپلزپارٹی کی جلسہ گاہ میں اسٹیج اور ملحقہ باؤنڈری کی سیکیورٹی سندھ پولیس نے سنبھال لی، پنجاب پولیس کو صرف پنڈال تک محدد کردیا گیا۔

پی پی پی کے سینئر رہنماء فرحت اللہ بابر کہتے ہیں کہ بلاول بھٹو کو کچھ ہوا تو ذمہ دار انتظامیہ اور پولیس ہوگی، بلاول کی سیکیورٹی کو یقینی بنایا جائے، غوث اعظم چوک اوچ شریف میں پنجاب پولیس رکاوٹیں کھڑی کرکے پی پی پی قافلے کی راہ میں رکاوٹ بنی ہوئی ہے۔

PUNJAB

bilawal bhutto zardari

FARHAT ULLAH BABAR

Election 2018

Hurdles

#GE2018

Tabool ads will show in this div