برائلر مرغی افغانستان برآمد کرنے پر پابندی عائد

ttry

خیبر پختونخوا حکومت نے بڑھتی ہوئی قیمت کے باعث برائلر مرغی کی افغانستان برآمد پر مکمل پابندی عائد کر دی جبکہ دیگر جانوروں کے گوشت کے نرخ قابو میں رکھنے کے لیے اسمگلنگ کی روک تھام کے اقدامات شروع کر دیے ہیں۔

صوبے میں گائے اور مرغی کے گوشت کی قیمتوں کو قابو میں رکھنے کیلئے اور اسمگلنگ روکنے کے لیے افغانستان کیساتھ منسلک تمام اضلاع میں لائیو سٹاک کی 10چیک پوسٹیں قائم کر دی ہیں گئی ہے جبکہ تمام قبائلی علاقوں کے خیبر پختونخوا میں انضمام کے بعد افغانستان کے ساتھ ملنے والی سرحدوں پر مزید چیک پوسٹیں قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

محکمہ داخلہ کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق لائیو سٹاک کی تمام چیک پوسٹیں قبائلی اضلاع کی ضلعی انتظامیہ کے ساتھ مل کر کام کریں گی اور پشاور سمیت صوبہ بھر سے افغانستان سمگل کئے جانے والے زندہ جانوروں اور گوشت کی روک تھام کیلئے اقدامات کریں گی۔

 اسی طرح برائلر مرغی کی افغانستان برآمد پر مکمل پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ چیک پوسٹوں کو یہ اختیار دیا گیا ہے کہ وہ غیر قانونی طورپر جانور اور گوشت لے جانے سے روکیں۔ ساتھ ہی برائلر مرغی کی تجارت پر بھی قابو پائیں۔

ڈائریکٹر لائیو سٹاک سید معصوم شاہ کے مطابق پشاور سمیت صوبہ بھر میں مرغی کے گوشت کی قیمتوں میں مسلسل اضافے کی وجہ سے نگران حکومت کے واضح احکامات کے بعد محکمہ داخلہ کے ساتھ مل کر چیک پوسٹیں قائم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ امید ہے ان چیک پوسٹوں کی مدد سے مرغی سمیت دیگر جانوروں کے گوشت کی قیمتوں پربھی کنٹرول کر لیا جائے گا۔

KPK

mutton

Tabool ads will show in this div