سیکیورٹی حالات بہتر ہیں، کئی ٹیمیں پاکستان آنا چاہتی ہیں، شہریارخان

ویب ایڈیٹر

لاہور : چیئرمین پی سی بی کہتے ہیں کہ نئے قانون کا محمد عامر کو فائدہ ہوگا، فاسٹ بولر کی بحالی کیلئے 3، 4 دن میں اپیل کریں گے، سعید اجمل کی ورلڈ کپ میں شمولیت کا امکان ففٹی ففٹی ہے، کرکٹ بورڈ اور ٹیم میں تسلسل کی ضرورت ہے، ملک میں سیکیورٹی کے حالات بہت بہتر ہیں، کئی ٹیمیں پاکستان آنا چاہتی ہیں۔

لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین شہریار خان نے کہا کہ آئی سی سی میں پاکستان کے 2 نمائندے ہوں گے، انٹرنیشنل کرکٹ کونسل میں ہماری پوزیشن مضبوط ہوئی ہے، پاکستان اہم کمیٹیوں کا رکن ہے، محمد عامر نئے اینٹی کرپشن قانون سے فائدہ اٹھانے کے اہل ہیں، انہیں اس سے فائدہ ہوگا، محمد عامر کی بحالی کيلئے 3، 4 دن میں اپیل کریں گے، فاسٹ بولر کی کرکٹ میں واپسی میں کچھ وقت لگے گا، امید ہے عامر کو آئی سی سی سے زیادہ رعایت مل جائے، سلمان بٹ اور محمد آصف نئے قانون سے فی الحال فائدہ نہیں اُٹھا سکتے۔

ان کا کہنا ہے کہ پاکستان میں سیکیورٹی کے حالات بہت بہتر ہوئے ہیں، ہم نے کئی ٹیموں کو پاکستان آنے کی دعوت دی ہے، بنگلہ دیش اور سری لنکن بورڈ پاکستان ٹیم بھیجنے کیلئے تیار ہیں، کینیا اور کئی ممالک کی ٹیمیں پاکستان آنے کیلئے بے قرار ہیں، اسکاٹ لینڈ، نیدر لینڈ، زمبابوے بھی ٹیم بھیجنے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔

چیئرمین پی سی بی کہتے ہیں کہ سعید اجمل ایکشن ٹھیک کرنے کيلئے بہت محنت کررہے ہیں، اُمید ہے سعید اجمل کا ٹیسٹ بہتر آئے گا، سعید اجمل کو ورلڈ کپ کے 30 کھلاڑیوں میں شامل کرلیا گیا، سعید اجمل کے ورلڈ کپ کھیلنے کے ففٹی ففٹی چانس ہیں، اسپاٹ فکسنگ کیس میں مظہر مجید کی گواہی مشکوک ہے، اسپاٹ فکسنگ سے کرکٹ بدنام ہوئی۔

شہریار خان کا کہنا ہے کہ مصباح الحق کو ورلڈ کپ تک کپتان رکھنے کی یقین دہانی کرائی، ان پر کیا گیا اعتماد درست ثابت ہوا، کرکٹ بورڈ اور ٹیم میں تسلسل کی ضرورت ہے، قومی ٹیم نیوزی لینڈ کیخلاف ٹیسٹ کی طرح ون ڈے اور ٹی 20 بھی جیتے گی۔ سماء

Militants

solution

oil tanker

Tabool ads will show in this div