نیب ریفرنس، جے آئی ٹی عدالت کو گمراہ کررہی ہے، مریم نواز کے وکیل کے دلائل جاری

سپریم کورٹ کے پاناما فیصلے میں مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کا تو نام ہی نہیں تھا، نہ ہی جے آئی ٹی کو دیئے گئے 13 سوالوں میں کوئی تذکرہ، وکیل صفائی امجد پرویز نے اپنے دلائل میں کہا جے آئی ٹی نے سپریم کورٹ کو بھی گمراہ کیا اور احتساب عدالت کو گمراہ کرنے میں بھی کامیاب رہی جبکہ استغاثہ نے تو کیس ثابت ہی نہیں کیا۔

احتساب عدالت میں شریف خاندان کے لندن فلیٹ ریفرنس کی سماعت ہوئی، مریم نواز کے وکیل امجد پرویز نے اپنے دلائل دیئے، کہا اس کیس میں ملکیت، معلوم ذرائع آمدن، اخراجات اور پھر معلوم ذرائع آمدن کی اثاثوں سے مطابقت ثابت کرنا ہوگی، لیکن استغاثہ نے تو اپنا کیس ثابت ہی نہیں کیا، عدالت کا فیصلہ موجود ہے، مفروضے پر سزا نہیں ہو سکتی۔

امجد پرویز نے کہا سپریم کورٹ نے مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کو جے آئی ٹی میں پيش ہونے کا نہيں کہا، نہ ہی عدالتی فیصلے یا جے آئی ٹی کو دیئے گئے 13 سوالوں میں دونوں کا تذکرہ ہے۔

وہ کہتے ہیں کہ جے آئی ٹی نے سپریم کورٹ کو بھی گمراہ کیا اور احتساب عدالت کو گمراہ کرنے میں بھی کامیاب رہی۔

عدالت میں نواز شریف اور مریم نواز کے حاضری سے 7 روزہ استثنیٰ کی درخواست اور کلثوم نواز کی پرانی میڈیکل رپورٹ بھی جمع کرائی گئی، وکیل صفائی نے کہا کہ نئی میڈیکل رپورٹ کل جمع کرادی جائے گی۔

جج محمد بشیر نے کہا پھر فیصلہ بھی کل ہی کریں گے، البتہ ملزمان کو حاضری سے جمعرات کے روز کا استثنیٰ دے دیا گیا۔ کیس کی مزید سماعت 29 جون کو ہوگی، مریم کے وکیل امجد پرویز کل بھی دلائل جاری رکھیں گے۔

JIT

MARYAM NAWAZ

nab reference

CAPTAIN SAFDAR

London Flats

Panama

Tabool ads will show in this div