فاروق ستار نے پی آئی بی کے امیدواروں کا اختیار بھی خالد مقبول کو دیدیا

Jun 28, 2018

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/06/Farooq-Sattar-Talk-Khi-28-06.mp4"][/video]

متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے سینئر رہنماء ٖڈاکٹر فاروق ستار نے الیکشن 2018ء کیلئے مرکزی رابطہ کمیٹی کے ساتھ اتنخابی مہم چلانے کا اعلان کردیا۔ کہتے ہیں کہ پی آئی بی گروپ کے امیداروں کے فیصلے کا اختیار بھی خالد مقبول صدیقی کو دے دیا ہے۔

کراچی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا تھا کہ آئندہ انتخابات ہماری آزمائش ہے، انتخابی مہم میں رکاوٹیں بھی آئیں گی اور سازشیں بھی ہوں گی، مل جل کر رکاوٹوں اور سازشوں کو دور کرنے کیلئے رابطہ کمیٹی اور بہادر آباد کے ساتھیوں کا تعاون چاہئے۔

انہوں نے مزید کہا کہ بہادر آباد میں میرے ساتھیوں نے پُرتپاک استقبال کیا، میں آج بھی اپنے تمام ساتھیوں کے ساتھ ہوں، ایم کیو ایم ایک اور پتنگ کے نشان پر الیکشن لڑے گی، رہنماؤں میں اختلافات پر خوشیاں منانے والے مخالفین سمجھ رہے تھے کہ انہیں ایم کیو ایم کا ووٹ بینک حلوے کی طرح مل گیا، لیکن آج وہ شدید مایوسی کا شکار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ منشور بنانے میں میرا بھی پورا حصہ ہے اور رہے گا، تمام کارکنان خالد مقبول صدیقی سے ملاقات کریں گے، ہمارے دفاتر ہمیں واپس ملنے چاہیں، مشترکہ طور پر ہمیں جو فیصلہ کرنا ہوگا کریں گے، ہمارے ملاپ کا تعلق ٹکٹ کے حوالے سے نہیں، تنظیم کو مضبوط کرنے کیلئے میرا کردار حاضر ہے، سمجھتا ہوں الیکشن نہ لڑنے سے ہمارا ملاپ مضبوط ہوگا۔

الیکشن 2018 میں انتخابی امیدواروں کے حوالے سے بات کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار بولے کہ ایم کیو ایم پاکستان کے پی آئی بی گروپ نے بھی کئی امیدوار کھڑے کئے ہیں، مخالفین غلط فہمیاں پیدا کرنے کی کوشش کررہے ہیں، تاہم شکایات کا ازالہ کرنے کیلئے 6 رکنی کمیٹی بنادی گئی ہے۔

انہوں نے واضح کیا کہ میں پی آئی بی گروپ کی جانب سے کھڑے کئے گئے اپنے امیدواروں کا فیصلہ بھی رابطہ کمیٹی اور ڈاکٹر خالد مقبول صدیقی پر چھوڑ رہا ہوں۔

 

khalid maqbool siddiqui

election campaign

Dr. Farooq Sattar

Election 2018

#GE2018