طالبان نے دس رکنی مذاکراتی کمیٹی بنادی

اسٹاف رپورٹ

اسلام آباد: مذاکرات کے حوالے سے کالعدم تحریک طالبان نے رابطہ کار کمیٹی کے بعد مذاکرات کی نگرانی کے لئے بھی دس رکنی کمیٹی بنادی۔ طالبان ترجمان نے سرکاری ٹیم پر اعتماد کا اظہار کیا اور وفود کو اپنے علاقوں میں مکمل سیکیورٹی کی یقین دہانی کرادی۔

ذرائع کے مطابق طالبان کی کمیٹی میں قاری شکیل خالد حقانی ۔۔ عمر خالد خراسانی ۔۔ قاری بشیر ۔۔ اعظم طارق ۔۔ شاہد اللہ شاہد اور عصمت اللہ معاویہ شامل ہیں۔

طالبان ترجمان شاہد اللہ شاہد نے امید ظاہر کی کہ مذاکرات شریعت کے حق میں کامیاب ہوں گے ۔۔ ان کا کہنا تھا کہ مذاکرات شمالی وزیرستان میں نہیں ہوں گے ۔۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ مذاکرات کے لئے حکومتی کمیٹی پر اعتماد ہے ۔۔ طالبان کی سیاسی شوریٰ مذاکراتی کمیٹی کی رہنمائی اور نگرانی کرے گی ۔۔ وفود کو اپنی عملداری والے علاقوں میں مکمل تحفظ فراہم کریں گے امید ہے کہ موجودہ حکومت ماضی کی حکوتموں کی طرح کوئی غلطی نہیں دہرائے گی۔

ترجمان کا کہنا تھا کہ مذاکراتی کمیٹی میں جن لوگوں کے نام دیئے گئے پہلے ان سے مشاورت کی گئی تھی اس کے بعد ناموں کا اعلان کیا گیا۔ عمران خان سے بھی رابطہ ہوا تھا۔

دوسری جانب عمران خان کی زیر صدارت تحریک انصاف کی کور کمیٹی کا اجلاس اسلام آباد میں ہوا جس میں طالبان کی مذاکراتی کمیٹی میں عمران خان کی شمولیت کی پیشکش پر غور کیا گیا۔

نے

jundullah

Benazir

Tabool ads will show in this div