ہرسال85ہزارپاکستانیوں کاشکار،کینسرجدید دورمیں بھی انسان کاجانی دشمن

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
اسلام آباد : کینسر انسان کا جانی دشمن ہے لیکن سائنسی ترقی کے باوجود ابھی تک اِس مہلک مرض پر قابو نہیں پایا جا سکا، پاکستان میں کینسر کے متاثرین کی صورتحال اور علاج کی سہولتوں پر حکومت کو توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

کينسر آج بھی سب سے خطرناک مرض ہے، دنیا بھر میں ہر سال ، اسی لاکھ انسان ، سرطان کا شکار ہو کر موت کے منہ ميں چلے جاتے ہیں۔ پاکستان ميں سالانہ ڈيڑھ لاکھ افراد کينسر کے مرض ميں مبتلا ہوتے ہيں اور 85 ہزار جان کی بازی ہار جاتےہيں۔ افسوس کی بات یہ ہے کہ ملک میں کینسر کی تشخیص اور علاج کی سہولیات نہ ہونے کے برابر اور انتہائی مہنگی ہیں۔ 

پاکستان ميں ہر سال چاليس ہزار سے زیادہ خواتین بريسٹ کينسر کا شکار ہوتی ہيں۔ آٹھ ہزار بچے بھی موذی مرض سے ہلاک ہو جاتے ہيں۔ کينسر ميں اضافے کی بڑی وجوہات میں غيرمعياری غذا، آلودگی، نشہ اور قریبی رشتے داروں کی آپس ميں شاديوں کی روايت سرفہرست ہیں۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ سادہ طرز زندگی، ورزش اور صحت کی سستی سہولیات فراہم کر کے کينسر سے اموات کو کم کیا جا سکتا ہے۔ سماء

Tabool ads will show in this div