پارلیمانی کمیٹی سے بائيکاٹ غير ذمہ دارانہ اقدام ہے،عبدالمالک بلوچ

نگران وزير اعلیٰ بلوچستان کے معاملے  پر اونٹ کسی کروٹ نہيں بيٹھ رہا ، سابق وزير اعلیٰ بلوچستان عبدالمالک بلوچ کہتے ہيں کہ فيصلے کا اختيار اب اليکشن کميشن کے پاس ہے۔ 

عبدالمالک بلوچ کا کہنا تھا کہ ہم نے آئينی تقاضے پورے کئے ہیں، حکومت کا  پارلیمانی کمیٹی سے بائيکاٹ غير ذمہ دارانہ اقدام ہے،قدوس بزنجو سمجھتے ہيں کہ ان کے پاس وقت ہے مگر آئینی طور پر قدوس بزنجو کے پاس اب وقت نہیں،ان کا مزید کہنا تھا کہ فيصلے کا اختيار اب اليکشن کميشن کے پاس ہے اور اب فيصلہ اليکشن کميشن ہی کرے گا ۔

 دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ ن کے ترجمان نے سماء سے بات کرتے ہوئے کہا کہ حکومتی بائيکاٹ  کے فیصلے کی مخالفت کرتے ہیں، ایک وزیر اعلیٰ کو جوڈیشل مارشل لا کی باتیں کرنا زیب نہیں دیتا، ہم نے پہلے بھی آئین کی پاسداری کی ہے اور آئندہ بھی آئین کے مطابق ہی کام کرتے رہیں گے،ان کا مزید کہنا تھا کہ اس طرح کے تمام ہتھکنڈے الیکشن کو موخر کرنے کے تاخیری حربے ہیں جن کی کوئی بھی جمہوری پارٹی حمایت نہیں کر سکتی۔

nawab sana ullah zehri

Eelection Commission

dr malik baloch

Caretaker CM Balochistan

Tabool ads will show in this div