پنجاب حکومت نے پانچ سال میں کیا کیا؟

 

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/06/Punjab-Govts-5-Years-Lhr-Pkg-01-06.mp4"][/video]

ن ليگ پنجاب ميں اپني پانچ سالہ حکومتی کارکردگي کو مثالي قرار دے رہي ہے تو اپوزيشن ہر منصوبے ميں کرپشن کا الزام لگاتي ہے۔

ن لیگ کی حکومت اپنی مدت پوری کر کے رخصت ہو گئی۔ اقتدار کے پانچ سال میں پنجاب حکومت کے پاس منصوبوں اور دعوؤں کي طويل فہرست ہے جبکہ اپوزيشن کا موقف ہے کہ جتنا بڑا منصوبہ تھا اتني ہي زيادہ کرپشن ہوئی۔ شہبازشريف کي حکومت عوامي فلاح کا ايک بھي کام نہيں کرسکی۔

اپوزيشن ليڈرمحمودالرشيد نے سما سے بات کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب حکومت کی ترجيحات ہي درست نہيں ہيں۔ عوام کو بنيادي سہوليات نہيں دےسکے اورپلوں اورسڑ کوں پرزور ہے، پھر ہرمعاملے پر نيب ميں انکوائرياں چل رہي ہيں۔

پنجاب حکوم کی کارکردگی دیکھی جائے تو موجودہ دور ميں صاف پاني منصوبہ مکمل نہ ہوسکا۔ تعليم اورصحت کے شعبے بھي پہلے چار سال ميں نظرانداز کئے گئے ليکن حکمران جماعت کا موقف ہے کہ عوامي خدمت کے امتحان ميں انہيں کاميابي ملی ۔

رہنما ن لیگ زعيم قادری نے اس حوالے سے کہا کہ ہماري کارکردگی بہترين رہي ہے، کسي بھي شعبےکو ديکھ ليں اوراسکا موازنہ دوسری حکومتوں کےساتھ کريں تاہم ابھی بہت کچھ کرنا باقی ہے۔

بعض منصوبوں جیسے کہ نندی پور پاورپراجيکٹ اور بہاولپور سولر پارک پر پنجاب حکومت کو مسلسل تنقيد کا بھي سامنا کرنا پڑا۔اس کے علاوہ اورنج لائن ٹرين، ساہيوال کول پراجيکٹ سميت چھ بجلي گھر، سڑکوں کي تعمير اوراسپتالوں کے توسيعی منصوبوں پر کام کیا گیا۔

حکومت کے آخری چھ ماہ ميں پنجاب کي چھپن کمپنيوں ميں مبينہ کرپشن کا معاملہ بھي سامنے آيا جس کي تحقيقات نيب کررہا ہے۔

 

PTI

PML N

punjab government

development projects

Tabool ads will show in this div