کیا آپ کو پتا ہے میگھن نے اپنے گلدستے کیساتھ کیا کیا؟

کیا آپ کو معلوم ہے کہ برطانوی شہزادی ہیری کی بیگم میگھن مارکل نے شادی کے دن ہاتھ میں اٹھائے گلدستے کے ساتھ کیا کیا تھا ؟؟ نہیں تو آئیں ہم آپ کو بتاتے ہیں۔

جہاں میگھن کیلئے شاہی خاندان میں شادی ایک امتحان ہے، وہیں انہیں شاہی رسم و رواج کو اپنا بھی ایک مشکل مرحلہ ہوگا۔ انہیں روایات کے پیش نظر میگھن نے اپنی شادی کا گلدستہ دیگر دلہنوں کی طرح ہوا میں اچھال کر پھینکا نہیں بلکہ اسے ایک گمنام سپاہی کی قبر پر چڑھایا۔

روایتی انداز میں تیار یہ بکے آنجہانی شاہی بہو ڈیانا کے پسندیدہ پھولوں سے ملکر بنایا گیا تھا۔ شاہی خاندان میں شاہی دلہن کے ہاتھوں میں تھامے ہوئے گلدستے کو گلمنام فوجیوں کی قبروں پر چڑھانے کی تاریخ 100 سال پرانی ہے۔

اس رسم کا آغاز اس وقت ہوا جب ملکہ برطانیہ الزبتھ دوئم کی والدہ الزبتھ بوز لیون نے اپنی شادی کا گلدستہ اس وقت کے ایک گمنام سپاہی کی قبر پر چڑھایا تھا۔ الزبتھ بوز کی شادی سال 1923 میں بادشاہ جورج چوتھم سے ہوئی تھی۔

شاہی روایت کے مطابق جنگ عظیم اول میں ملکہ برطانیہ الزبتھ بوز کے بڑے بھائی فرگس بوز مارے گئے تھے، تاہم جنگی صورت حال اور تباہی کے باعث ان کی قبر گمنام رہی۔ شاہی خاندان میں نئی دلہن کی جانب سے گلدستہ چڑھانے کی یہ روایت الزبتھ بوز نے جنم دی، جو آج بھی جاری ہے، اس رسم کا مقصد گمنام فوجیوں کو خراج تحسین پیش کرنا ہے۔

اس سے قبل ملکہ برطانیہ نے شہزادی، لیڈی ڈیانا اور کیٹ مڈلٹن بھی یہ رسم انجام دے چکی ہیں۔

Meghan Markle

royal wedding

World War

unknown soldier

Bouquet

Elizabeth Bowes-Lyon

Tabool ads will show in this div