بلوچستان میں کانگو وائرس نے پنجے گاڑھ لئے، 13 افراد جاں بحق، درجنوں زیر علاج

اسٹاف رپورٹ

کوئٹہ : بلوچستان میں کانگو وائرس نے پھر سر اُٹھا لیا، صوبے میں وائرس کا شکار ایک درجن سے زائد افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے اور کئی زیرعلاج  ہیں۔

کانگو وائرس نے بلوچستان میں پنجے گاڑھ لئے، چمن سے کانگو وائرس کا نیا کیس سامنے آگیا، محکمہ صحت کے مطابق رواں سال بلوچستان میں کانگو وائرس کے 56 کیسز رپورٹ ہوئے، جن میں 12 خواتین بھی شامل ہیں، خطرناک وائرس سے 13 مریض دم توڑ چکے ہیں۔

طبی ماہرین کے مطابق بروقت علاج سے جان بچائی جاسکتی ہے، کوئٹہ کے فاطمہ جناح جنرل اینڈ چیسٹ اسپتال میں آئسولیشن وارڈ تو موجود ہے تاہم کانگو وائرس کی تصدیق کیلئے لیبارٹری میں سہولت دستاب نہیں۔

ڈاکٹروں کے مطابق کانگو وائرس مال مویشیوں میں پائے جانیوالے مخصوص کیڑے سے انسانوں میں منتقل ہوتا ہے، مال مویشیوں کو صفا ستھرا رکھنے، اسپرے اور دیگر حفاظتی طریقہ کار سے وائرس کا پھیلاؤ روکا جاسکتا ہے۔ سماء

Report

internet

bln

kyi

بلوچستان

inaugurates

Tabool ads will show in this div