عالمی ادارہ صحت نےپاکستان کوپولیوپرکنٹرول کیلئے6ماہ کی ڈیڈلائن دیدی

Nov 30, -0001


اسٹاف رپورٹ
اسلام آباد : عالمی ادارہ صحت نے پولیو کے بڑھتے ہوئے واقعات پر پاکستان سمیت چار ملکوں پر مزید تین ماہ کیلئے سفری پابندیاں عائد کردیں۔ پاکستان کو چھ ماہ میں وائرس پر قابو پانے کی ہدایت۔ ناکامی کی صورت میں پاکستانی مسافروں کو بیرون ملک اسکریننگ کی ہوگی۔

پولیو وائرس پر عالمی ادارہ صحت کی بین الاقوامی ہیلتھ ریگولیشن کمیٹی کا اجلاس جنیوا میں ہوا جس میں دنیا میں پولیو کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق جولائی دو ہزار چودہ سے پاکستان میں پولیو وائرس بڑھ رہا ہے۔ گزشتہ تین ماہ کے دوران تین مرتبہ وائرس پاکستان سے افغانستان منتقل ہوا۔ کمیٹی نے پاکستان، کیمرون، گنی اور شام پر سفری پابندیاں مزید تین ماہ تک جاری رکھنے کا فیصلہ کیا۔

کمیٹی نے پاکستان کو ہدایت کی ہے کہ چھ ماہ کے دوران پولیو وائرس پر قابو پانے کیلئے اقدامات کرے۔ پولیو کارڈ نہ رکھنے والے مسافروں کو بیرون ملک سفر سے روکا جائے اور مسافروں کو خارجی مقامات پر بھی پولیو کارڈ کی فراہمی یقینی بنائی جائے۔ کمیٹی نے پاکستان سے چھ ماہ کے دوران بیرون ملک سفر کرنے والوں کا ڈیٹا بھی مانگ لیا۔

کمیٹی نے خبردار کیا ہے کہ اگر پاکستان نے پولیو کے خاتمے کیلئے ہدایات پر عمل نہ کیا تو اسے مزید عالمی پابندیوں کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے جن میں پاکستانی مسافروں کی بین الاقوامی ہوائی اڈوں پر اسکریننگ بھی شامل ہے۔ سماء

کی

CII

صحت

Tabool ads will show in this div