قومی سلامتی کمیٹی کا اعلامیہ خطرناک قرار: نوازشریف نے ڈان لیکس کی بھی تصدیق کردی

May 15, 2018

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/05/NS-1200-SOT-15-05-18.mp4"][/video]

سابق وزیراعظم نوازشریف نے ممبئی حملوں سے متعلق متنازع بیان پرقومی سلامتی کمیٹی اجلاس کے اعلامیے کو مسترد کرتے ہوئے رپورٹرسرل المیڈا کی گزشتہ خبرکی تصدیق بھی کردی۔

احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پرصحافیوں سےغیر رسمی گفتگو میں نوازشریف نے کہا کہ اس وقت قومی سلامتی کمیٹی میں یہی باتیں کی گئی تھیں جنھیں ڈان لیکس کا نام دیا گیا۔ بولے پتہ چلنا چاہیے ملک کو اِس نہج پر کِس نے پہنچایا۔ دہشتگردی کی بنیاد کس نے رکھی؟ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہوناچاہیے۔ تحقیقات کیلئے قومی کمیشن بنانے کا مطالبہ بھی کر دیا۔

نواز شریف نے قومی سلامتی کمیٹی کے گذشتہ روز کے اعلامیے کو حالات اور حقائق کے منافی قرار دے دیتے ہوئے کہا کہ یہ اعلامیہ بڑا خوفناک اور تکلیف دہ ہے۔ بات ذات کی نہیں پورے ملک کی ہےکہ ملک کس سمت میں چلا گیا۔ اتنا پیارا ملک ہے ہمارا، کیا بن گیا ہے۔

قائد ن لیگ کا کہنا تھا کہ وقت آگیا ہے کہ پتہ چلنا چاہیے ملک کو اس نج پر کس نے پہنچایا۔ یہاں دہشت گردی کی بیناد کس نے رکھی۔پاکستان دنیا میں تنہا ہوچکا ہے۔ سوال اٹھایا کہ کوئی ملک ہےجوآج ہمارے ساتھ ہے تونام بتائیں ۔ ساری صورتحال کی تحقیقات کیلئے قومی کمیشن بننا چاہیے تاکہ دودھ کا دودھ اور پانی کا پانی ہو جائے۔

نواز شریف نے صحافی سرل المیڈا کی سابقہ خبر کی بھی تصدیق کرتے ہوئے کہا اُس وقت قومی سلامتی کمیٹی میں بھی یہی باتیں ہوئیں کہ اپنے گھرکو ٹھیک کریں جنہیں ڈان لیکس کا نام دیا گیا۔ حالانکہ جو کہا گیا وہ حقیقت تھی۔

واضح رہے کہ نواز شریف نے پاکستانی میڈیا گروپ ڈان نیوز کے صحافی سرل المیڈا کو ایک انٹرویو میں ممبئی حملوں کے حوالے سے کہا کہ کیا یہ اجازت دینی چاہیے کہ غیر ریاستی عناصر جا کر 150 افراد کو قتل کریں۔ نواز شریف نے انٹرویو میں عدلیہ پر بھی سوال اٹھاتے ہوئے کہا تھا کہ ممبئی حملوں کا ٹرائل اب تک مکمل کیوں نہیں ہو سکا۔

ڈان لیکس کا پس منظر

انگریزی روزنامے ڈان نیوز میں 3 اکتوبر 2016 کو ایک خبر شائع کی گئی جس میں انکشاف کیا گیا تھا کہ قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں وزارت خارجہ حکام نے بریفنگ میں کہا ہے کہ اگر کالعدم تنظیموں کیخلاف کارروائی نہ کی گئی تو پاکستان دنیا میں تنہا ہو جائے گا۔ خبر کے مطابق اجلاس میں شریک خفیہ اداروں کے سربراہان کو کالعدم تنظیموں کیخلاف بلا امتیاز کارروائی اور مبینہ سرپرستی بند کرنے کی ہدایت کی گئی۔

خبرنواز شریف کا حالیہ انٹرویولینے والےصحافی سرل المیڈا نے ہی بریک کی تھی جس پر خوب تنازع کھڑا ہوا، پاک فوج کی جانب سے اسے ملکی سلامتی کے منافی قرار دیتے ہوئے خبر لیک کرنے والے ذمہ داروں کا نام سامنے لانے اور کارروائی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔

جس کے بعد حکومت نے انکوائری کمیٹی کی رپورٹ پر ڈان لیکس اسکینڈل میں ملوث وزیراعظم کے معاون خصوصی طارق فاطمی کو عہدے سے ہٹا تے ہوئے پرنسپل انفارمیشن سیکریٹری راؤ تحسین کے خلاف فوری کارروائی کا حکم دیا گیا تھا جبکہ سابق وفاقی وزیر اطلاعات پرویز رشید کو بھی اپنے عہدے سے ہاتھ دھونے پڑے تھے۔ ۔

Cyril Almeida

dawn leaks

NSC Meeting

Mumbai Attacks

controversial statement on Mumbau Attacks

Tabool ads will show in this div