وادی نیلم میں پل گرگیا، 5 سیاح جاں بحق، 14 کو بچالیا گیا، ریسکیو آپریشن جاری

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/05/Neelum-Accident-1500-Aslive-PKG-13-05-Kami.mp4"][/video]

مظفر آباد کے علاقے نالہ جاگراں پر بنا رابطہ پل ٹوٹنے سے 40 سیاح پانی میں ڈوب گئے، 5 افراد کی لاشیں اور 14 افراد کو بچا لیا گیا، جب کہ دیگر کی تلاش جاری ہے۔

نالہ جاگراں میں گرنے والے دو سیاحوں کی لاشوں کو بھی نکال لیا گیا ہے، جب کہ دیگر سیاحوں کی تلاش کیلئے ریسکیو آپریشن کا آغاز کردیا گیا ہے۔ ڈپٹی کمشنر نیلم کے مطابق پل گنجائش سے زائد افراد کا وزن برداشت نہ کرسکا اور ٹوٹ کر گرگیا۔

 

ابتدا میں مقامی افراد نے اپنی مدد آپ کے تحت امدادی کارروائیوں کا آغاز کیا، جس کے بعد انتظامیہ اور پاک فوج کے دستے بھی ریسکیو آپریشن کیلئے پہنچ گئے، جب کہ متاثرین سے متعلق معلومات کیلئے سیل بھی قائم کردیا گیا ہے۔

 

آرمی چیف نے وادی نیلم میں سیاحوں کے جانی نقصان پر اظہار افسوس کرتے ہوئے پاک فوج کو ریسکیو کاموں میں سول انتظامیہ کی ہر ممکن مدد کی ہدایت کردی۔ پاک فوج کے کمانڈوز کی خصوصی ٹیم  بھی وادی نیلم پہنچ گئی، پاک فوج کے ڈاکٹرز اور پیرا میڈیکس عملہ بھی امدادی کاموں میں مصروف ہے، ہیلی کاپٹرز بھی ریسکیو آپریشن میں حصہ لے رہے ہیں۔

 

آئی ایس پی آر کے مطابق ریسکیو آپریشن میں 5 افراد کی لاشیں اور 14 زخمیوں کو نکال لیا گیا، جنہیں ہیلی کاپٹرز کے ذریعے شاہ کوٹ سے مظفر آباد منتقل کردیا گیا۔

ڈپٹی کمشنر کے مطابق حادثے کا شکار ہونے والے سیاحوں کا تعلق لاہور، سرگودھا اور پنجاب کے دیگر علاقوں سے ہے۔

 

     

عینی شاہدین کے مطابق سیاح پل پر کھڑے ہو کر تصاویر بنا رہے تھے۔ ڈوبنے والوں میں خواتین بھی شامل ہیں۔ واضح رہے کہ کچھ عرصہ قبل بھی اسی علاقے میں پہلے بھی اندوہناک واقعہ پیش آچکا ہے۔

   

دوسری جانب وزیراعظم آزاد کشمیر فاروق حیدر خان نے واقعہ پر رپورٹ طلب کرلی۔ فاروق حیدر کا کہنا ہے کہ ڈپٹی کمشنر لمحہ بہ لمحہ حادثے سے آگاہ کر رہے ہیں۔ یہاں یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ نالہ جاگراں بلندی سے اترنے  والا انتہائی تیز رفتار نالہ ہے، جس میں پانی کا بہاؤ تیز ہوتا ہے۔

وادی نیلم :

وادی نیلم کا شمار پاکستانی کشمیرکی خوبصورت ترین وادیوں میں ہوتا ہے۔ جہاں دریا، صاف اور ٹھنڈے پانی کے بڑے بڑے نالے، چشمے، جنگلات اور سرسبز پہاڑ ہیں۔ جنت نظیر یہ وادی سیاحوں کیلئے جنت تصور کی جاتی ہے۔ قدرتی حسن اور وسائل سے مالا مال 250 کلومیٹر لمبی یہ وادی سالہ سال ہی سیاحوں کی میزبانی کرتی ہے۔ وادی نیلم میں توانائی کے سب سے بڑے منصوبے کی تعمیر بھی جاری ہے، جس کے تحت دریائے نیلم پر ایک ڈیم اور جھیل بھی تعمیر کی گئی۔ خوبصورتی اور بلا خوف وخطر آمد رفت، سڑک کی تعمیر اور صاف اور ٹھنڈے پانی کی وسیع پیمانے پر دستیابی سیاحوں کو اپنی طرف کھینچتی ہے۔

samaa

MUZAFFARABAD

STUDENTS

Tabool ads will show in this div