پنجاب میں خواتین کیلئے موٹرسائیکل چلانے کی تربیت کا آغاز

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/05/Women-On-Wheels-Training-Lhr-Pkg-11-05.mp4"][/video]

پنجاب حکومت نے خواتین کو بااختیار بنانے کیلئے آسان اقساط پر موٹرسائيکلیں فراہم کرنے کے پروگرام کا آغاز کردیا۔ اس مقصد کے تحت خواتين کو موٹرسائيکل چلانے کي تربيت بھی دی جارہی ہے۔

ہيلمٹ اور کٹ پہنے صنف نازک اپنی سواری ، خودمختاری کا عزم لیے موٹرسائیکل چلانا سیکھ رہی ہیں جن میں شادي شدہ خواتين کے ساتھ ساتھ کالجز اوريونيورسٹي کي طالبات بھي شامل ہيں ۔ٹريننگ مکمل کرتے ہي پنجاب حکومت سے آسان شرائط پر موٹرسائيکل مل جائے گي۔

پنجاب حکومت نے جولائي دوہزارسترہ ميں ويمن آن وہيلز پراجيکٹ کا آغاز کیا تھا لیکن موٹرسائيکل چلانے کا رجحان کم ہونے اورسخت شرائط کے باعث ابھي تک ٹارگٹ مکمل نہيں کيا جاسکا ۔

خواہشمند خواتین کو اسے چلانے کی تربیت دی جا رہی ہے۔ اس مقصد کے لیے تيرہ مئي کو لاہورميں تقريب کا انعقاد کیا جائے گاجس کے بعد مال روڈ پر ريلي بھي نکالي جائے گی۔

عرفان نامی ٹرينرنے سماکو بتایا کہ کل تين ہزار موٹرسائیکلیں ديني تھيں، جن کے لیے ابھی تک ہمارے پاس سات سو درخواستيں آئيں جن ميں سے ڈھائي سومنظورکی گئی ہیں۔

تربیت حاصل کرنے والی ثمرہ نامی طالبہ کا کہنا ہے کہ پہلے مجھے ابو چھوڑنے جاتے تھے مگر انہيں بھي بہت کام ہوتے ہيں، موٹرسائیکل چلانا سیکھنے کے بعد ميں خود آیا جايا کروں گي۔

ایک اور خاتون شانزہ نے کہا کہ مجھے شوق بھي تھا اور اب ضرورت بھي ہے۔ اپنے بچوں کو اسکول لينے چھوڑنے خود جايا کروں گي۔

punjab government

TRAINING PROGRAM

how to ride motorcycle

women on wheels

Tabool ads will show in this div