سرحد پار دہشت گرد اب بھی ملک کیلئے خطرہ ہیں

پشاور : انسپکٹر جنرل ایف سی ساؤتھ میجر جنرل عابد لطیف کا کہنا ہے کہ جنوبی وزیرستان میں حکومت کی رٹ بحال کردی گئی ہے، تاہم سرحد پار دہشت گرد اب بھی ملک کے لئے خطرہ ہے۔

پشاور میں پریس کانفرنس کے دوران میڈیا سے گفت گو میں انسپکٹر جنرل ایف سی ساوتھ میجر جنرل عابد لطیف کا کہنا تھا کہ وزیرستان میں فوجی کارروائیوں کے دوران 2647 دہشت گردوں کو مارا گیا، جب کہ ملکی دفاع کے لئے 808جوانوں اور افسروں نے جام شہادت نوش کیا۔

جنوبی وزیرستان میں حکومتی رٹ کو بحال کردیا گیا ہے، تاہم سرحد پار دہشت گرد اب بھی ملک کے لئے خطرہ ہیں، سرحد پار فائرنگ کے باوجود 48 کلومیٹر باڑ لگا دی گئی ہے، پاک افغان سرحد پر وزیرستان ایجنسی میں چیک پوسٹوں کی تعداد 90 سے کم کر کے 8 کردی گئی ہیں

عابد لطیف کے مطابق جنوبی وزیرستان میں دہشت گردوں نے آبادی کے قریب بارودی سرنگیں نصب کی تھیں، جنہیں پاک فوج نے 60 فیصد علاقے کو بارودی سرنگوں سے پاک کردیا۔ ایجنسی میں نصب پہلا موبائل فون ٹاور بھی بحال کردیا گیا ہے، جس کے بعد ایک ہفتے کے اندر موبائل سروس بھی بحال ہوجائے گی۔

TALIBAN

IED Attack

Tabool ads will show in this div