نیلسن منڈیلا نے ثابت کیا کہ جدوجہد کتابوں سے باہر بھی کامیاب ہوسکتی ہے، اوباما

اسٹاف رپورٹ


جوہانسبرگ : جنوبی افریقا کے شہر جوہانسبرگ میں  آنجہانی سیاہ فام رہنما نیلسن منڈیلا کی آخری رسومات ادا کی جارہی ہیں، دعائیہ گیت، خراج تحسین، عقیدت کے آنسو، فخر کا احساس، فضا ملے جلے جذبات سے بوجھل ہے، ابر اشکبار ہے، تقریب میں صدر ممنون حسین پاکستان کی ترجمانی کررہے ہیں۔


دعائیہ تقریب میں امریکی صدر باراک اوباما نے کہا کہ  نیلسن منڈیلا نے ثابت کیا کہ جدوجہد کتابوں سے باہر کی دنیا میں بھی کامیاب ہوسکتی ہے۔


سیاہ فام رہنما نیلسن منڈیلا کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے جوہانسبرگ نیشنل اسٹیڈیم میں عالمی رہنماء جمع ہیں۔


صدر پاکستان ممنون حسین عالمی رہنماؤں کے مجمع میں پاکستان کی نمائندگی کر رہے ہیں، نیشنل اسٹیدیم کے علاوہ 3 دیگر اسٹیڈیمز میں بڑی اسکرین پر تقریب کے مناظر دکھائے جارہے ہیں۔


امریکی صدر باراک اوباما نے افریقی رہنماء کی دعائیہ تقریب سے خطاب میں کہا کہ  نیلسن منڈیلا کی جدوجہد نے ثابت کیا کہ انقلاب کتابوں کی باہر کی دنیا سے باہر بھی آسکتا ہے۔


سابق صدور بل کلٹن، جارج ڈبلیو بش اور فرانسیسی صدر سرکوزی، اقوام متحدہ سربراہ بان کی مون، سب ہی سیاہ فام جدوجہد کو سلام کرنے جنوبی افریقہ میں جمع ہیں۔ سماء

سے

نے

Obama

ruling

azarenka

quakes

consulate

Tabool ads will show in this div