ن لیگ سندھ میں نیا سیاسی اتحاد بنانے کیلئے سرگرم

لاہور : مسلم لیگ ن نے سندھ ميں پيپلزپارٹی کیخلاف نئے سياسی اتحاد کی تیاریاں شروع کردیں، وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شريف 22 اپريل کو کراچی ميں اہم ملاقاتيں کريں گے۔

عام انتخابات 2018ء میں پیپلزپارٹی کو ٹف ٹائم دینے کیلئے مسلم لیگ ن کی اعلیٰ قیادت متحرک ہوگئی، سندھ میں نئے اتحاد کی تیاریاں کی جارہی ہیں، ن لیگ کے صدر شہباز شریف 22 اپریل کو کراچی میں مختلف سیاسی جماعتوں کے رہنماؤں سے اہم ملاقاتیں کریں گے۔

صوبائی وزیر تعلیم رانا مشہود نے سماء کو بتایا کہ اے این پی، ایم کیو ایم پاکستان اور گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس سے سیاسی الحاق ہوسکتا ہے، متحدہ قومی موومنٹ اور پیر پگارا سے مثبت بات چیت چل رہی ہے۔

وہ کہتے ہیں کہ سندھ کے عوام اب شہباز شریف کی طرف دیکھ رہے ہیں۔

نواز شریف کی نااہلی کے بعد مسلم ليگ نون کی صدارت وزیراعلیٰ پنجاب کو مل چکی ہے، وہ چند روز قبل بھی کراچی کا ايک دورہ کرچکے ہيں۔

شہباز شریف نے کراچی میں تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے پیپلزپارٹی حکومت پر شدید تنقید کی تھی، ان کا کہنا تھا کہ ’’مرسوں مرسوں سندھ نہ ڈیں سوں‘‘ کا نعرہ لگانے والوں کا اصل مطلب تھا ’’مرسوں مرسوں کوئی کام نہ کر سوں‘‘۔

انہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ کراچی کا امن مسلم لیگ ن کی حکومت بحال کر چکی، اب سندھ کو اس کی بنیادی سہولیات بھی ہم فراہم کریں گے۔

ایم کیو ایم پاکستان بانی قائد سے کنارہ کشی کے بعد شدید ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے جبکہ گرینڈ ڈیمو کریٹک الائنس میں شامل رہنماء اور جماعتیں پچھلے کئی انتخابات میں پیپلزپارٹی کو شکست دینے میں ناکام رہی ہیں۔

Election2018

GDA

New Political Alliance

Tabool ads will show in this div