پاکستان کوحقانی نیٹ ورک کا مسئلہ خود حل کرنا ہوگا،ڈومورکا مطالبہ کرتے رہیں گے،اوباما

اسٹاف رپورٹ
واشنگٹن : امریکی صدر باراک اوباما نے کہا ہے کہ پاکستان سے ڈو مور کا مطالبہ کرتے رہیں گے۔ مولن کے بیان کی توثیق سے گریز کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ مولن نے مایوسی میں بیان دیا ہوگا۔

مائیک مولن کہتے ہیں کہ پاکستان کے بغیر خطے کے مسائل حل نہیں ہوں گے۔ افغانستان نے پاکستان کے ساتھ سہ فریقی مصالحتی کمیشن کا اجلاس منسوخ کردیا ہے۔
 
امریکی صدر اوباما نے کہا ہے کہ پاکستان کو حقانی نیٹ ورک کے مسئلے کا حل نکالنا ہوگا۔ حقانی نیٹ ورک کے پاکستان کے اندر رابطے ہیں یا پھر انہیں مخصوص سرحدی علاقوں سے کارروائی کی آزادی دی گئی ہے۔

اومابا کا کہنا تھا کہ وہ  مائیک مولن کے الزامات کی توثیق نہیں کرسکتے۔ ہوسکتا ہے کہ انہوں نے یہ بیان مایوسی میں دیا ہو لیکن امریکی انٹیلی جنس حقانی نیٹ ورک اور آئی ایس آئی کے رابطوں کو مکمل طور پرمسترد نہیں کرتی۔


امریکی صدر نے کہا کہ اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ دہشت گرد پاکستانی سرحدوں سے کارروائیاں نہ کریں۔ امریکی صدر کا کہنا تھا کہ پاکستان سے ڈو مور کا مطالبہ کرتے رہیں گے۔

مریکی سینیر عہدیدار نے پاکستان کی سرزمین پر کارروائی نہ کرنے کی یقین دہانی کرائی ہے۔ ان کا کہنا ہےکہ پاکستان کو آگاہ کردیا ہے کہ شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں کے خلاف کارروائی کے لئے فوج نہیں بھیجی جائے گی۔

سبکدوش مائیک مولن نے چیئرمین جوائنٹ چیفس آف اسٹاف کی کمان جنرل مارٹن ڈیمپسی کے حوالے کرنے کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کے بغیر خطے کے مسائل حل نہیں کئے جاسکتے۔

امریکی اخبار کے مطابق افغانستان نے برہان الدین ربانی کے قتل کا الزام لگاتے ہوئے پاکستان کے ساتھ سہہ فریقی مصالحتی کمیشن کا اجلاس بھی منسوخ کردیا ہے۔ سماء / ایجنسیز

کا

lord

woes

surrenders

heroes

Tabool ads will show in this div