پنجاب فوڈ اتھارٹی نے نیا قانون لانے کی تیاریاں مکمل کرلیں

Ayesha Mumtaz inspects food during a raid on a backyard sweets factory in Lahore, Pakistan. Her campaign to clean up the kitchens and food factories of Pakistan has earned her the nickname "The Fearless One."
Ayesha Mumtaz inspects food during a raid on a backyard sweets factory in Lahore, Pakistan. Her campaign to clean up the kitchens and food factories of Pakistan has earned her the nickname "The Fearless One."

لاہور: پنجاب فوڈاتھارٹی نےاشیائے خوردونوش کی پیکنگ کےلیےقانون لانےکی تیاری مکمل کرلي۔

نئے قانون کےمطابق خوراک کی پیکنگ ميں ایک تہہ والےفوم نمامیٹریل سےبنےکپ اورپلیٹ پرپابندی عائد ہوگی۔اشیاءخوردونوش کی پیکنگ کےلیےاخباراورردی کااستعمال بھی جرم ہوگا۔

فوم نماپلیٹ اور کپ کاتین تہوں پرمشتمل ہونالازم ہوگا اس کے علاوہ ڈبوں کوجوڑنےکےلئےاستعمال ہونےوالی حیواناتی گوند کاذریعہ حلال جانوروں سےہونالازم ہے۔

پنجاب فوڈ اتھارٹی نے تین تہوں والےپلاسٹک بیگ میں گھی اورآئل کی پیکنگ کوضروری قراردیاگیاہے۔ جبکہ پینےکےپانی کی 19 لیٹر بوتل کوچالیس باراستعمال کےبعدری سائیکل کرنالازم ہوگا۔

سائنٹیفک پینل کی منظوری کے بعد مکمل قانون پنجاب فوڈ اتھارٹی بورڈ کے آئندہ اجلاس میں منظوری کے لیے پیش کیا جائےگا۔

punjab food authority

PFA

Tabool ads will show in this div