پاکستان کا ان لوگوں سے رابطہ ہےجوامریکاکیلئےخطرہ ہیں،امریکاکاالزام

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
واشنگٹن : امریکی صدر براک اوباما نے کہا ہے کہ القاعدہ کے خلاف پاکستان  امریکا کا موثر اتحادی ہے۔ اسلام آباد نے واشنگٹن کے مفادات کا خیال نہ رکھا تو طویل المدتی اسٹریٹجک پارٹنر شپ مشکل میں پڑسکتی ہے۔ 
 
واشنگٹن میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے براک اوباما کا کہنا تھا کہ امریکا اور پاکستان ایک دوسرے سے تعاون کرتے آئے ہیں۔

خطے میں القاعدہ کے خلاف حالیہ کامیابیاں پاکستان کی مدد کے بغیر ممکن نہیں تھیں لیکن اس کے ساتھ انہوں نے الزام لگایا کہ پاکستان امریکی انخلا کے بعد افغانستان پر اپنا اثرورسوخ قائم کرنا چاہتا ہے۔
اوباما نے پاکستان پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ اس بارے میں بھی کوئی شک نہیں کہ پاکستان کے افغانستان میں ایسے لوگوں سے رابطے ہیں جنہیں امریکا اپنے لئے مسئلہ سمجھتا ہے۔

امریکی صدر کا کہنا تھا کہ پاکستان کو مستحکم افغانستان سے کوئی خطرہ محسوس نہیں کرنا چاہیئے۔ اگر پاکستان نے امریکی مفادات کا خیال نہ کیا تو طویل المدتی اسٹریٹجک تعلقات قائم رکھنا مشکل ہو جائے گا۔ پاک بھارت تعلقات پر امریکی صدر کا کہنا تھا کہ دونوں ممالک کے پرامن تعلقات سب کے مفاد میں ہیں۔ سماء / ایجنسیز

کا

سے

taiwan

assange