صدر، وزیراعظم، وفاقی وزیر داخلہ کارکن کے ماورائے عدالت قتل کا فوری نوٹس لیں: الطاف

اسٹاف رپورٹ
کراچی: متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسين نے پوليس تشدد سے ايم کيو ايم کے کارکن محمد عادل کے انتقال پر شديد الفاظ ميں مذمت کی ہے ۔

ايک بيان ميں الطاف حسين نے کہا کہ کراچی ميں قانون نافذ کرنے والے اداروں نے آئين و قانون کو پيروں تلے روند کر رکھ ديا ہے اور ايم کيو ايم کے کارکنان کی بلاجواز گرفتارياں ان پر بہیمانہ تشدد اور ماورائے عدالت قتل جيسے واقعات انسانی حقوق کی سنگين اور کھلی خلاف ورزی ہے۔

انہوں نے کہا کہ پوليس اور قانون نافذ کرنے والے ادارے ہی جب معصوم اور بے گناہ لوگوں کو سياسی مخالفين کی ايماء اور تعصب کی بنياد پر نشانہ بنائيں گے اور ان پر ظلم اور حراست ميں انسانيت سوز تشدد کريں گے اور ماورائے عدالت قتل کرکے ان کی مسخ شدہ لاشيں سڑکوں پر پھينکيں گے تو يہ عمل کرنے والے ملک دوست کہلائيں گے يا ملک دشمن۔

انہوں نے صدر پاکستان ، وزير اعظم نوازشريف اور وزير داخلہ چوہدری نثار سے مطالبہ کيا کہ محمد عادل کی شہادت کا نوٹس ليں۔

دوسری جانب الطاف حسين نے لاپتہ ہونے والے ايم کيو ايم پی  کے کارکن محمد علی کی والدہ کے انتقال پر بھی گہرے دکھ و افسوس کا اظہار کيا۔ سماء 

کے

کا

premier

death anniversary

وزیر

داخلہ

spy

Tabool ads will show in this div