نواز شریف اور مریم نواز آج بھی احتساب عدالت میں پیش

اسلام آباد : سابق وزیراعظم نواز شریف اپنی صاحبزادی مریم نواز کے ہمراہ آج پھر احتساب عدالت میں پیش ہو رہے ہیں۔ واضح رہے کہ گزشتہ سال جولائی میں پاناما کیس کے فیصلے کے بعد قومی احتساب بیورو کی جانب سے احتساب عدالت میں شریف خاندان کے خلاف کرپشن کیسز سے متعلق ریفرنس دائر کیا گیا تھا۔

نواز شریف، اُن کے بچوں، داماد کے خلاف ایون فیلڈ پراپرٹیز ریفرنس کی سماعت آج بھی احتساب عدالت اسلام آباد میں جاری رہے گی۔ عدالت میں جوائنٹ انویسٹی گیشن (جے آئی ٹی) کے سربراہ واجد ضیا کا بیان دوسرے روز بھی قلمبند کیا جائے گا۔ نواز شریف اپنے صاحبزادی کے ہمراہ عدالت میں پیش ہونے کیلئے علی الصبح رہائش گاہ سے روانہ ہوئے۔

 

احتساب عدالت میں گزشتہ روز کی سماعت میں نوازشریف ، مریم نوا ز اور کیپٹن رٹائرڈ صفدر پیش ہوئے، گزشتہ سماعت میں پاناما کیس کیلئے بننے والی جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کے سربراہ واجد ضیا نے قطری شہزادے سے خط و کتابت کا ریکارڈ پیش کیا، جسے بطور شواہد عدالتی ریکارڈ کا حصہ بنا دیا گیا۔

عدالت نے جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم کی مکمل رپورٹ کو بطور شواہد عدالتی ریکارڈ کا حصہ نہ بنانے کی مریم نواز کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کر لیا،عدالتی ریمارکس میں کہا گیا کہ واجد ضیا کے بیان پر نواز شریف کا اعتراض بھی نوٹ کیا جائے گا۔

 

واضح رہے کہ اٹھائیس جولائی 2017 کو سپریم کورٹ کی جانب سے پاناما لیکس کے مقدمے میں اس وقت کے وزیراعظم نواز شریف کو نا اہل قرار دیا گیا اور قومی احتساب بیورو کو نواز شریف، اُن کے بچوں، داماد اور اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنس دائر کرنا کا حکم دیا گیا تھا، جس کے بعد سات ستمبر 2017 کو قومی احتساب بیورو نے نواز شریف، اُن کے بچوں اور داماد محمد صفدر کے خلاف تین ریفرنس دائر کرنے کا فیصلہ کیا۔ آٹھ ستمبر 2017 کو احتساب عدالت میں ریفرنس دائر کر دیے گئے۔ انیس ستمبر کو اسلام آباد میں احتساب عدالت کے جج محمد بشیر نے مقدمات کی سماعت شروع کی۔

اس پہلی سماعت میں شریف خاندان کی جانب میں کوئی بھی پیش نہیں ہوا اور نواز شریف کے مشیر آصف کرمانی نے عدالت میں پیش ہو کر کہا کہ نواز شریف کی اہلیہ کینسر کے علاج کے لیے لندن میں موجود ہیں اور شریف خاندان اُن کی تیمار داری میں مصروف ہے۔ عدالت نے شریف خاندان کو عدالت میں حاضر کرنے کے لیے دوسرا سمن جاری کیا۔

 

تاہم چھبیس ستمبر کو سابق وزیراعظم نواز شریف پہلی بار احتساب عدالت میں پیش ہوئے اور جج محمد بشیر نے ملزم محمد نواز شریف کی طرف دیکھا اور کہا کہ آپ کی حاضری لگ گئی ہے 'اب آپ جاسکتے ہیں'۔

corruption Cases

SHARIF FAMILY

CAPTAIN SAFDAR

London Flats

panama case

Tabool ads will show in this div