پاک امریکاکےدرمیان نائن الیون کےبعدشروع ہونیوالی شراکت داری ختم،امریکا

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
واشنگٹن : سلالہ چیک پوسٹ پر نیٹو حملے کے نتیجے میں بعد نائن الیون کے بعد شروع ہونے والی پاک  امریکا شراکت داری ختم ہوگئی ہے۔


امریکی اخبار کا دعویٰ ہے کہ امریکا پاکستان کے ساتھ محدود تعلقات بچانے کی کوششوں پر مجبور ہوگیا ہے۔

امریکی حکام کو اس حقیقت کا احساس ہوگیا ہے کہ پاکستان کے ساتھ وسیع تر سیکیورٹی تعلقات اپنے انجام کو پہنچ چکے ہیں۔ اب امریکی حکام کی کوشش یہ ہے کہ پاکستان کے ساتھ محدود تعلقات کو بچا لیا جائے۔

اخبار نیویارک ٹائمز کے مطابق نئی صورت حال میں امریکا پاکستان کی سرزمین پر میزائل حملے محدود کرنے، اپنے جاسوسوں اور فوجیوں کی تعداد میں کمی پر مجبور ہوگا۔


امریکی اور پاکستانی حکام کہتے ہیں کہ پاکستان کیلئے امریکی امداد میں بھی خاطر خواہ کٹوتی ہوگی۔

ایک امریکی افسر نے نام ظاہر نہ کرنے کی درخواست کے ساتھ کہا کہ امریکا نے نائن الیون کے دور کے بعد کی شراکت داری کا باب بند کردیا ہے۔


پاکستان نے بھی امریکا کو یہ واضح پیغام دیا ہے کہ وہ امریکا کے ساتھ تعلقات کا ازسر نو جائزہ لے رہا ہے۔


امریکی حکام کا کہنا ہے کہ پاکستان کے ساتھ تعلقات کسی نہ کسی شکل برقرار رہیں گے مگر نئے تعلقات کی نوعیت اسی وقت واضح ہو گی جب پاکستان کی جانب سے جائزہ لینے کا عمل مکمل ہو جائے گا۔

اخبار کے مطابق پاکستان میں سولہ نومبر سے میزائل حملے بند ہیں  اور پاکستان میں امریکی اہلکاروں کی تعداد جو چار سو تھی کم ہوکر ایک سو رہ گئی ہے۔ سماء/ایجنسیز

Shakira

mehndi

soldier

damage

Tabool ads will show in this div