پاکستان کا انوکھا اعزاز، سکھوں کی شادی کی رجسٹریشن کا قانون منظور

[video width="640" height="360" mp4="https://i.samaa.tv/wp-content/uploads/sites/11//usr/nfs/sestore3/samaa/vodstore/urdu-digital-library/2018/03/Sikh-Marriage-Act-Lhr-Pkg-14-03.mp4"][/video]

لاہور : پنجاب اسمبلی نے سکھوں کی شادی کی رجسٹريشن کا قانون منظور کرليا، پاکستان دنيا کا واحد ملک ہے جس نے يہ قانون بنايا، قانون کا نام آنند کراج ايکٹ رکھا گيا ہے۔

پنجاب کی سکھ برادری کو بڑی خوشخبری مل گئی، صوبائی اسمبلی نے شادی رجسٹرڈ کرنے کا قانون منظور ہوگيا، پنجاب اسمبلی میں اقليتی رکن رميش سنگھ نے بل پيش کیا تھا جسے ایوان نے منظور کرلیا۔

قانون کے مطابق شادی کیلئے سکھ لڑکے يا لڑکی کی کم از کم عمر 18 سال رکھی گئی ہے۔ پاکستان دنیا کا واحد ملک ہے جہاں سکھوں کی شادی رجسٹریشن کرنے کا قانون بنایا گیا ہے، بھارت ميں بھی سکھوں کیلئے عليحدہ ميرج ايکٹ نہيں۔

میرج ایکٹ کی منظوری کے موقع پر سکھ برادری کے نمائندے بھی پنجاب اسمبلی ميں موجود تھے۔ جنرل سیکریٹری گردوارہ پربندھک کمیٹی گوپال سنگھ کا کہنا ہے کہ یہ سب سکھ پنجابی بھائی چارے کا نتیجہ ہے۔

پنجاب اسمبلی نے مدت سماعت ترميمی بل بھی منظور کرليا ہے، جس کے تحت عدالتی فيصلے کیخلاف 90 روز ميں اپيل دائر کی جاسکے گی۔

PUNJAB

PUNJAB ASSEMBLY

NEW LAW

Tabool ads will show in this div