بھارت امریکا کی مشترکہ جنگی مشقیں مارچ میں ہونگی

Nov 30, -0001

اسٹاف رپورٹ
نئی دہلی : بھارت  اور امریکا کے درمیان پہلی مرتبہ مشترکہ فوجی جنگی مشقیں رواں سال مارچ کے مہینے میں ہونگی۔ واضح رہے کہ پاکستان کی مشرقی سرحد کے نزدیک بھارتی علاقے راجستھان کے صحرا میں امریکی فوجی اپنے ساز و سامان کے ساتھ مشقوں میں حصہ لیتے نظر آئیں گے۔

ایودھ ابھیاس نامی مشترکہ جنگی مشقیں رواں سال مارچ میں ہونگی جو کہ دونوں ممالک کے درمیان بڑھتے ہوئے دفاعی تعلقات کی عکاسی کرتا ہے۔


بھارتی میڈیا نے فوجی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ بھارت اور امریکا کے درمیان پاکستان کے مشرقی سرحد کے قریب راجستھان کے صحرا میں ہونے والی ان مشقوں میں امریکی ٹینک اور دو سو امریکی فوجی حصہ لیں گے۔

بھارت کے روسی ساختہ بی ایم پی ٹینک بھی جنگی مشقوں میں حصہ لیں گے تاہم یہ معلوم نہیں ہوسکا ہے کہ امریکا کے کون سے ٹینک ان مشقوں میں حصہ لیں گے۔


امریکا اور بھارت کے درمیان دفاعی تعاون کے سلسلے میں مارچ میں مشترکہ جنگی مشقوں کے بعد بھارت کے جموں و کشمیر رائفل رجمنٹ کے فوجی جوان کیلیفورنیا جائیں گے جہاں وہ امریکی فوجیوں کے ساتھ مل کر شتروجیت کے نام سے مشترکہ جنگی مشقوں میں حصہ لیں گے۔

رپورٹس کے مطابق انیس ویں جموں و کشمیر رائفل بٹالین کے ایک سو تیس بھارتی فوجی شدت پسندوں کے خلاف کارروائی کی تربیت حاصل کریں گے۔


اس کے ساتھ ساتھ امریکا اور بھارت کے اسپیشل فورسز کے درمیان رواں سال اگست میں مشترکہ جنگی مشقوں کا بھی پروگرام ترتیب دیا گیا ہے جس میں امریکی اسپیشل فورسز کے ساٹھ اہلکار حصہ لیں گے۔ سماء /ایجنسیز

میں

کی

decision

rampage

Tabool ads will show in this div