نیب ریفرنس،شریف خاندان کو 2 ماہ کی مہلت مل گئی

اسلام آباد : نیب نے شریف خاندان کیخلاف ریفرنسز کی پیشرفت رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کرا دی۔ عدالت نے نیب کی درخواست پر ریفرنسز نمٹانے کے مقررہ مدت میں 2 ماہ کی توسیع کر دی۔

سپریم کورٹ میں شریف خاندان کیخلاف نیب ریفرنسز 6 ماہ میں نمٹانے کے معاملے پر سماعت ہوئی ۔ قومی احتساب بیورو کے ڈپٹی پراسیکیوٹر سپریم کورٹ میں پیش ہوئے۔

 

جسٹس اعجاز الاحسن کہا احتساب عدالت نے وجوہات بتائیں لیکن درکار وقت نہیں بتایا ، یہ بتایا جائے کتنا وقت چاہیئے ؟ ایڈیشنل پراسیکیوٹر نیب عمران الحق نے بتایا کہ شریف خاندان کے ریفرنسز کیلئے دو ماہ کافی ہوں گے ، ضمنی ریفرنسز بھی دائر کیے گئے ، تین ریفرنسز کے بیشتر گواہان کا بیان ریکارڈ ہو چکا ہے۔

ایڈیشنل پراسیکیوٹر نیب عمران الحق نے بتایا کہ اسحاق ڈار کیخلاف ریفرنس میں وقت لگے گا، اسحاق ڈار مفرور ہیں۔ جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا استغاثہ کی ذمہ داری کون سر انجام دے رہا ہے ؟ اسحاق ڈار مفرور ہو کر بھی سینیٹر کیسے بن گئے ؟ عدالتی مفرور کا کوئی حق نہیں ہوتا۔ سماء

Al Azizia

Tabool ads will show in this div